Wednesday , September 20 2017
Home / عرب دنیا / یمن میں مغویہ فرانسیسی خاتون کی رہائی

یمن میں مغویہ فرانسیسی خاتون کی رہائی

مسقط۔ 7 اگست (سیاست ڈاٹ کام) فرانسیسی یرغمال ایزابیل پرائم جسے اغواء کے تقریباً 6 ماہ بعد یمن میں رہا کردیا گیا تھا، آج پڑوسی ملک عمان پہنچی جہاں سے وہ اپنے وطن روانہ ہوجائے گی۔ سرکاری خبر رساں ایجنسی نے یہ بات بتائی۔ فرانسیسی پریسیڈنسی نے کل شام اعلان کیا تھا کہ 30 سالہ پرائم جو یمن میں عالمی بینک کے فنڈ سے چلائے جارہے ایک پراجکٹ میں مشاورتی فرائض انجام دیا کرتی تھی، اسے اغواء کاروں نے آزاد کردیا ہے۔ دوسری طرف عمان کی وزارت خارجہ نے بتایا کہ خلیجی ملک کی کوششوں کے علاوہ کچھ دیگر یمنی رابطہ کاروں کے تعاون سے پرائم کی رہائی کو ممکن بنایا جاسکا۔ فرانسیسی حکام کی جانب سے درخواست کئے جانے کے بعد سلطان قابوس کے حکم پر پرائم کی تلاش شروع کی گئی تھی جس کیلئے فرانسیسی پریسیڈنسی نے عمان سے پرائم کی رہائی کیلئے مکمل تعاون پر اظہارتشکر کیا ہے۔ پرائم  2013ء میں یمن آئی تھی۔ صنعاء سے اسے جاریہ سال فروری میں اس کے ایک مترجم شیرین مکوئی کے ساتھ اس وقت اغوا کیا گیا تھا جب وہ لوگ بذریعہ کار اپنے کام پر جارہے تھے۔ مکوئی کی رہائی مارچ میں ہی عمل میں آچکی تھی۔

TOPPOPULARRECENT