Thursday , September 21 2017
Home / Top Stories / یمن پر القاعدہ کے حملے، 15 فوجی اور 19 جہادی ہلاک

یمن پر القاعدہ کے حملے، 15 فوجی اور 19 جہادی ہلاک

عدن ۔ 20 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) القاعدہ نے دو فوجی مورچوں پر جنوب مغربی یمن میں آج الصبح حملے کئے جس کی وجہ سے 15 فوجی اور 19 جہادی ہلاک ہوگئے۔ کئی شہری بھی زخمی ہوئے۔ فوج اور طبی ذرائع کے بموجب حملوں کا نشانہ فوجی مورچے تھے جو صوبہ حضرموت میں قصبہ شیبم کے قریب تھے۔ فوجی عہدیدار نے کہا کہ 15 فوجی اور 19 جہادی ہلاک ہوگئے۔ اصل حملہ شیبم کے مغربی باب الداخلہ پر کیا گیا۔ مقامی عہدیداروں کے بموجب ہولناک جھڑپوں کا آغاز ہوگیا جس میں القاعدہ کے عسکریت پسندوں نے لب سڑک بم دھماکے فوج کی طلایہ گرد پارٹی کو ہدف بناتے ہوئے کئے جبکہ ایک خودکش بم بردار نے اپنی کار کو رہائشی علاقہ کے قریب فوجی چوکی پر دھماکہ سے اڑا دیا۔ اس دھماکہ سے کئی مکانوں کو نقصان پہنچا۔ کئی شہری زخمی ہوگئے۔ زخمیوں اور مہلوک فوجیوں کی نعشوں کو قریبی قصبہ سییون کے ہاسپٹل منتقل کردیا گیا۔ حضرموت میں تعینات فوج صدر یمن عبدالرب منصور ہادی کی وفادار ہے جبکہ حوثی باغیوں نے حکومت کے خلاف بغاوت کر رکھی ہے۔ شمالی اور جنوبی یمن میں حوثیوں کی پیشقدمی اور مرکزی اقتدار کی ناکامی سے فائدہ اٹھا کر اپریل میں القاعدہ نے ساحلی شہر مکلہ پر قبضہ کرلیا تھا۔ القاعدہ نے جزیرہ نمائے عرب میں اسلامی شرعی قانون کی سختی سے نافذ کر رکھا ہے۔ خاص طور پر اپنے زیرقبضہ یمن کے علاقوں میں شریعت پر سختی سے عمل کیا جاتا ہے۔ امریکہ القاعدہ کے جہادیوں کے اس نیٹ ورک کو انتہائی خطرناک قرار دیتا ہے اور اس کے قائدین پر ڈرون حملے کیا کرتا ہے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT