Friday , September 22 2017
Home / Top Stories / یمن پر سعودی زیرقیادت طیاروں کی بمباری

یمن پر سعودی زیرقیادت طیاروں کی بمباری

صنعا۔ 10 اگست (سیاست ڈاٹ کام) سعودی زیرقیادت مخلوط اتحاد کے جنگی طیاروں نے شیعہ باغیوں کے علاقوں پر پورے یمن میں تازہ فضائی حملوں کا آغاز کردیا حالانکہ بین الاقوامی سطح پر امن مذاکرات کی معطلی کے بعد کشیدگی میں اضافہ پر اندیشوں کا اظہار کیا گیا تھا۔ مخلوط اتحاد نے امریکہ کی ثالثی سے کویت میں حکومت کے نمائندوں اور ایران کی حمایت یافتہ حوثی باغیوں کے درمیان کسی نتیجہ کے بغیر امن مذاکرات کے معطل کردیئے جانے کے چند دن بعد فضائی حملوں کا احیاء کردیا۔ مخلوط اتحاد کیلئے یمن کی حکومت حوثیوں کے خلاف مارچ 2015ء سے برسرجنگ ہے۔ پورے شمالی یمن میں باغیوں کے مورچوں پر حملے کئے گئے ہیں۔ مخلوط اتحاد کے عہدیداروں اور قبائیلی جنگجوؤں نے متحدہ حملے کئے ہیں۔ ایک دن قبل مخلوط اتحاد کے جیٹ طیاروں نے باغیوں کے زیرقبضہ یمن کے دارالحکومت صنعا پر گذشتہ تین ماہ میں پہلی بار فضائی حملے کئے تھے۔ اقوام متحدہ کا کہنا ہیکہ وہ فضائی حملوں کی احیاء پر تشویش میں مبتلاء ہے۔ سکریٹری جنرل نے ان اطلاعات پر کہ حجہ، صنعا اور صوبہ صنعا پر گذشتہ چند دنوں سے مختلف فریقین کے درمیان جنگ میں اضافہ ہوتا جارہا ہے۔ اقوام متحدہ کے سربراہ بانکی مون کے نائب ترجمان نے کہا کہ لڑائی میں اضافہ کے انسانیت اور انسانی حقوق کی صورتحال پر برے اثرات مرتب ہوں گے۔ یمنی عوام کے مسائل میں اضافہ ہوگا۔

TOPPOPULARRECENT