Wednesday , August 23 2017
Home / عرب دنیا / یمن کے سمندر میں 150 پناہ گزینوں کو پھینک دیا گیا، چھ ہلاک، 13لاپتہ

یمن کے سمندر میں 150 پناہ گزینوں کو پھینک دیا گیا، چھ ہلاک، 13لاپتہ

دبئی، 11 اگست (سیاست ڈاٹ کام) یمن کے سمندری ساحل پر گزشتہ 24 گھنٹے کے دوران دوسری بار انسانی اسمگلروں نے تقریبا 150 پناہ گزینوں کو سمندر میں پھینک دیا جس سے چھ کی موت ہو گئی اور 13 اب بھی لاپتہ بتائے جا رہے ہیں۔ اقوام متحدہ کی مائیگریشن ایجنسی نے عالمی مہاجرین کی تنظیم (آئی او ایم) کے حوالے سے بتایا کہ اس کے ملازمین کو ساحل سمندر پر چھ نعشیں ملی ہیں جن میں دو خواتین اور چار مرد ہیں جبکہ 13 پناہ گزین اب بھی لاپتہ ہیں۔ ایجنسی نے کہا کہ آئی او ایم کے ملازمین کے آنے سے پہلے 84 لوگوں نے ساحل سمندر چھوڑ دیا تھا جبکہ 57 پناہ گزینوں کو ہنگامی طبی امداد کے طور پر خوراک اور پانی دستیاب کرایا گیا۔ اقوام متحدہ کی مائیگریشن ایجنسی نے کہا کہ 160 ایتھوپیائی پناہ گزینوں کو جمعرات کی دیر رات کو سمندر میں پھینکا گیا۔ یمن میں ایجنسی کے سربراہ لوریٹ ڈی بوک نے کہا کہ یہ واقعی ایک بہت ڈرامائی صورتحال ہے ۔ آئی او ایم کے چیف ولیم لیکي سوئنگ نے واقعہ کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ یمن کے ساحل پر اسمگلروں کے اس حرکت کی ہم سخت مذمت کرتے ہیں۔
آئی او ایم نے ایک بیان میں کہا کہ اس سے قبل چہارشنبہ کو اسمگلروں نے تقریبا 120 لوگوں کو سمندر میں پھینک دیا تھا جس کے بعد اس کے ملازمین کو شبوا ساحل سمندر پر 29 پناہ گزینوں کی نعشیں ملی تھیں، جبکہ 22 اب بھی لاپتہ ہیں۔

 

TOPPOPULARRECENT