Wednesday , August 23 2017
Home / سیاسیات / یوتھ کانگریس کے مظاہرہ کیخلاف بی جے پی کی تحریک مراعات

یوتھ کانگریس کے مظاہرہ کیخلاف بی جے پی کی تحریک مراعات

نئی دہلی ۔ 6 اگست (سیاست ڈاٹ کام) لوک سبھا سے 25 کانگریس ارکان کی معطلی کے خلاف یوتھ کانگریس کے اسپیکر لوک سبھا کی رہائش گاہ کے باہر احتجاج اور دفتر پر حملہ کے واقعہ پر بی جے پی ارکان نے آج تحریک مراعات پیش کی۔ آج ایوان میں جیسے ہی کئی بی جے پی ارکان نے یہ مسئلہ اٹھایا اس وقت وزیر پارلیمانی امور ایم وینکیا نائیڈو نے نوٹس مراعات کمیٹی کو روانہ کرنے کی خواہش کی۔ اسپیکر سمترا مہاجن نے پہلے پس و پیش کیا اور کہا کہ وہ اس پر غور کریں گی۔ کیرت سومیا نے یہ مسئلہ اٹھاتے ہوئے یوتھ کانگریس کے کل اسپیکر کی رہائش گاہ کے باہر مظاہرہ کو حیرت ناک قرار دیا اور کہا کہ ایسا پہلے کبھی نہیں ہوا تھا۔ بی جے پی چیف وہپ ارجن رام میگھوال نے اسے ’’جمہوریت کا قتل‘‘ قرار دیتے ہوئے کہا کہ اسپیکر پر جانبداری کا الزام عائد کیا جارہا ہے۔ اس وقت اسپیکر پس و پیش کررہی تھیں تب وینکیا نائیڈو نے کہا کہ وہ اسے شخصی مسئلہ نہ سمجھیں کیونکہ یہ ان کے دفتر اور عہدہ کا مسئلہ ہے۔

 

سونیا اور راہول پر غیراخلاقی رویہ کی
حوصلہ افزائی کا الزام : بی جے پی
نئی دہلی ۔ 6 اگست (سیاست ڈاٹ کام) بی جے پی نے آج صدر کانگریس سونیا گاندھی اور نائب صدر کانگریس راہول گاندھی پر الزام عائد کیا کہ وہ مسلسل طور پر پرغرور، غیراخلاقی اور نامناسب رویہ کی اپنے پارٹی ارکان کی جانب سے اختیار کرنے کی حوصلہ افزائی کررہے ہیں اور خواہش کی کہ دونوں قائدین اسپیکر لوک سبھا سے ان کی قیامگاہ کے باہر احتجاجی مظاہروں پر معذرت خواہی کریں۔ اہم اپوزیشن پارٹی نے پارلیمنٹ سے سڑکوں تک ’انارکی‘ پھیلا رکھی ہے۔ وہ نہیں چاہتے کہ این ڈی اے حکومت کا کوئی بھی قانون منظور ہوسکے۔ اس لئے کہ ایسے قوانین قوم کی ترقی میں اہم کردار ادا کریں گے۔ بی جے پی کے قومی سکریٹری سری کانت شرما نے یہ الزام عائد کرتے ہوئے سونیا اور راہول گاندھی سے مطالبہ کیا کہ وہ اسپیکر لوک سبھا سے معذرت خواہی کریں کیونکہ کانگریس ارکان کی معطلی کے خلاف کانگریس احتجاج کررہی ہے۔

TOPPOPULARRECENT