Monday , September 25 2017
Home / Top Stories / یوروپ پناہ گزینوں کیلئے دروازے کھول دے : پوپ فرانسیس

یوروپ پناہ گزینوں کیلئے دروازے کھول دے : پوپ فرانسیس

وینا / بیروت ۔ /6 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) پوپ فرانسیس نے ہر گرجا گھر ، مذہبی کمیونٹی ، مونٹیسری اور یوروپ کے ہر مکان سے خواہش کی ہے کہ ’’ جنگ اور بھوک کی وجہ سے موت کے منہ سے بچ کر آنے والے ‘‘ پناہ گزینوں کو رہائش فراہم کریں ۔ انہوں نے کہا کہ ویاٹیکین اپنے دو گرجا گھروںمیں ایسے دو پناہ گزین خاندانوں کو اپناتے ہوئے شروعات کرے گا ۔ سینٹ پیٹرس اسکوائر پر ہزاروں افراد سے خطاب کرتے ہوئے پوپ نے کہا کہ صرف اتنا کہنا کافی نہیں کہ حوصلہ رکھئیے یا پھر حالات کا سامنا کیجئے ۔ انہوں نے کہا کہ جو لوگ آرہے ہیں وہ زندگی کی تلاش میں ہے اور ہمیں انہیں پناہ دینی چاہئیے ۔ یوروپ کے ساتھ ساتھ دنیا بھر کو پوپ فرانسیس کا یہ پہلا راست پیام تھا جبکہ یوروپ عالمی جنگ دوم کے بعد بڑے پیمانے پر نقل مقام کرنے والوں کا سامنا کررہا ہے ۔ یونان سے لیکر جرمنی تک ہزاروں پناہ گزین یہاں پہونچ رہے ہیں اور سڑکیں ، کشتیاں ، بسیں اور ٹرینس سب ان پناہ گزینوں سے بھری ہوئی ہیں ۔ دوسری طرف خلیج فارس کے عرب ممالک جہاں فی کس آمدنی دنیا بھر میں سب سے زیادہ ہے ، پناہ گزینوں کے تعلق سے خاموشی اختیار کئے ہوئے ہیں ۔ ذرائع ابلاغ میں ایسے عرب قائدین پر تنقیدیں کی جارہی ہیں جو شام میں جنگ سے متاثرہ عوام کے تعلق سے زبانی ہمدردی تو کرتے ہیں لیکن جب پناہ گزینوں کا مسئلہ درپیش ہے تو وہ بالکل خاموش ہیں ۔ بعض تجزیہ نگاروں نے کہا ہے کہ عرب ممالک کی امیگریشن پالیسی کچھ اس طرح کی ہے کہ وہ پناہ گزینوں کو اپنا نہیں سکتے اس کے برعکس وہ مالی طور پر ان متاثرین کی ممکنہ مدد کررہے ہیں ۔ اگر امیگریشن پالیسی میں تبدیلی لائی جائے تو دیگر کئی مسائل کھڑے ہوسکتے ہیں۔اس دوران قبرص نے 114 شامی پناہ گزینوں کو بچالیا جبکہ ان کی کشتی سمندری موجوں کا شکار ہوگئی تھی ۔اسی طرح جرمنی نے کہا کہ وہ ہزاروں پناہ گزینوں کے خیرمقدم کیلئے تیار ہے۔

TOPPOPULARRECENT