Thursday , August 17 2017
Home / ہندوستان / یوم آزادی کے موقع پر 82 جرات ایوارڈس کو صدر جمہوریہ کی منظوری

یوم آزادی کے موقع پر 82 جرات ایوارڈس کو صدر جمہوریہ کی منظوری

حولدار ہنگپن دادا کو بعدازمرگ اشوک چکر ‘ پٹھان کوٹ کے این ایس جی شہید کو شوریہ چکر کے اعزازات
نئی دہلی ۔ 14 اگست ( سیاست ڈاٹ کام ) حولدار ہنگپن داد جنہوں نے اپنی زندگی بہادری کے ساتھ لڑتے ہوئے دے دی اور تین دہشت گردوں کو پاکستانی مقبوضہ کشمیر سے دراندازی کرتے ہوئے پٹھان کوٹ میں گولی مارکر ہلاک کردیا ۔ بعداز مرگ اشوک چکر اور لیفٹننٹ کرنل نرنجن ای کے سربراہ این ایس جی کا انسداد بم شعبہ جو ایک دہشت گرد کی نعش کو پٹھان کوٹ فضائی فوجی اڈے پر جنوری میں دہشت گرد حملہ کے وقت منتقل کرنے کے دوران ہلاک ہوگئے تھے ‘بعداز مرگ شوریہ چکر کے اعزاز کا مستحق قرار دیا گیا ۔ کارپورل گرو سیون سنگھ اور یہ دونوں ان 82 فوجی اور نیم فوجی ارکان عملہ میں شامل ہیں جنہیں صدر جمہوریہ پرنب مکرجی نے جرات ایوارڈس کا مستحق قرار دیا ہے ۔ بحریہ کے ملا ویر سنگھ جو کئی مشکل حالات کے دوران ڈورنئر طیارہ سے دو نعشیں منتقل کرنے کے دوران گذشتہ سال گوا کے ساحل کے قریب حادثہ کا شکار ہوگئے ‘نوسینا میڈل جرات ایوارڈ کیلئے لیفٹننٹ کمانڈر وکاس کمار نروال کے ہمراہ منتخب کئے گئے ۔

اسکوڈرن لیڈر ابھیشیک سنگھ  تنورت اور اسکوڈرن لیڈر بھاویش کمار دوبے کو وایوسینا میڈل کیلئے منتخب کیا گیا ۔ ہندوستانی ساحلی محافظین کے کمانڈنٹ رادھا کرشنا راجیش نمبیرج  اور کلدیپ پردھان یانترک کو تترکھشک میڈل دیئے جائیں گے ۔ جرات ایوارڈ کی صدرجمہوریہ نے جو مسلح افواج کے سپریم کمانڈر بھی ہیں منظوری دے چکے ہیں ‘ ان ایوارڈس میں ایک اشوک چکر ‘ 14شوریہ چکر ‘63سینا میڈلس ‘2 نوسینا میڈلس اور 2 وایوسینا میڈلس شامل ہیں ۔ فوج کو بعد از مرگ ایک اشوک چکر حاصل ہوا ۔ 11شوریہ چکر ( بشمول 6بعداز مرگ ) اور 63 سینا میڈلس ( بشمول 12بعد از مرگ ) حاصل ہوئے ۔ سابق کمانڈو حولدار ہنگپن دادا نے 26مئی جاریہ سال 3دہشت گردوں کو گولی مار کر ہلاک کردیا ‘ جبکہ چوتھی گولی چلانے کے دوران وہ ایک دھماکہ سے ہلاک ہوگئے ۔ انہیں غیر معمولی اور نمایاں وفاداری کیلئے بعد از مرگ ایوارڈ دیا جارہا ہے ۔ انہوں نے دہشت گردوں کی راہ فرار بند کردی تھی اور دہشت گرد پہاڑوں اور بڑے بڑے پتھروں کے پیچھے پناہ لینے پر مجبور ہوگئے تھے ۔

پٹھان کوٹ کے دلیر فوجیوں لیفٹننٹ کرنل نرنجن اور کارپورل سنگھ کو جنہوں نے پاکستان سے دراندازی کرنے والے دہشت گردوں سے جنگ کرتے ہوئے ہندوستانی فضائیہ کے فوجی اڈہ پر اپنی جانوں کا نذرانہ مادر وطن کو پیش کیا ۔ ان کی جرات کے اعتراف کے طور پر جرات ایوارڈس کے مستحق قرار دیئے گئے ہیں ۔لیفٹننٹ کرنل نرنجن این ایس جی کے انسداد بم اسکوڈ کے رکن تھے ‘ وہ ایک دستی بم کو ناکارہ بناتے ہوئے ہلاک ہوگئے تھے ۔ کارپورل سنگھ اولین شخص تھے جنہوں نے پٹھان کوٹ کے فضائیہ کے اڈہ پر دہشت گردوں کو چیلنج کیا تھا اور بہادری سے جنگ کرتے ہوئے ہلاک ہوگئے تھے ۔ صدر جمہوریہ نے فوج اور نیم فوجی فورس کے ارکان عملہ کو ان کی مختلف فوجی کارروائیوں میں نمایاں کارکردگی پر پانچ آپریشن میگھ دوت ‘ 22آپریشن رکھشک اور ایک آپریشن رھینو کے دوران بہادری کا غیر معمولی مظاہرہ کرنے پر ایوارڈس کا مستحق قرار دیا ۔

TOPPOPULARRECENT