Tuesday , October 24 2017
Home / اضلاع کی خبریں / یوم اقلیتی بہبود سے عوامی قائدین کی سرد مہری

یوم اقلیتی بہبود سے عوامی قائدین کی سرد مہری

شہر میں موجود رہنے کے باوجود عدم شرکت آخر کیوں ؟ امجد خاں کا استفسار
ورنگل۔/13نومبر، ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) یوم اقلیتی بہبود، مولانا آزاد کے 128 ویں یوم پیدائش کے موقع پر حکومت کی جانب سے منقعدہ پروگرام میں ضلع کے اعلیٰ عہدیدار عوامی قائدین نے شرکت کرنا ضروری نہیں سمجھا۔ اقلیتوں کی جانب سے منعقدہ پروگرام میں بھی یہ لوگ شرکت نہیں کررہے ہیں آخر وجہ کیا ہے۔ جناب محمد امجد خان سابق صدر وقف کمیٹی ورنگل نے اپنے اپنے بیان میں کہا کہ جب بھی 11نومبر کوورنگل میں پروگرام منعقد کیا جاتا ہے ضلع کلکٹر شرکت نہیں کرتے اور متعلقہ عہدیداروں کو ہدایت دی جاتی ہے کہ وہ پروگرام میں شرکت کریں۔ آخر مسلم اقلیت کے ساتھ عوامی قائدین اور ضلع کے اعلیٰ عہدیداروں کا ایسا رویہ کیوں ۔ ہمیشہ ورنگل کلکٹریٹ میں پروگرام جب بھی منعقد ہوتا ہے کوئی شرکت نہیں کرتا اور پروگرام منعقد کرنے کیلئے اقلیتی محکمہ کے ذمہ داروں کو اس کی ذمہ داری دی جاتی ہے ، یہ ذمہ داری بھی شہر کے فلاحی تنظیموں ، کیا سرگرم سماجی کارکن، مسلم عوامی قائدین کو اطلاع تک نہیں دیتے ہیں۔ صرف جمع خرچ کے طور پر چند اپنے جان پہچان کے لوگوں کو دعوت نامہ دے دیتے ہیں۔ واضح رہے کہ کلکٹریٹ میں منعقدہ یوم اقلیتی بہبود پروگرام میں ڈپٹی میئر خواجہ سراج الدین کے علاوہ مسلم کارپوریٹرس کو تک دعوت نامہ نہیں دیا گیا۔ پروگرام میں موجودہ عوامی قائدین نے جب ناراضگی کا اظہار کیا تو کہا گیا کہ آئندہ اس بات کا خیال رکھا جائے گا۔ ہرسال مسلمانوں کی جانب سے یہی ناراضگی ظاہر کی جاتی ہے اور جواب بھی اس طرح اتا ہے کہ آئندہ خیال کیا جائے گا۔ ورنگل اربن فینانس کارپوریشن کے عملہ پر تمام شرکاء نے ناراضگی کا اظہار کیا۔ اس موقع پر پروگرام میں موجود جوائنٹ کلکٹر دیانند نے کہا کہ ہاں مجھے بھی اقلیتی فینانس کارپوریشن کے عملے کے تعلق سے کئی ایک شکایت موصول ہورہی ہیں عملہ انتہائی لاپرواہی کا مظاہرہ کررہا ہے۔ اس سلسلہ میں ضرور کارروائی کی جائے گی۔ پروگرام میں کلکٹر نے شرکت نہیں کی جبکہ وہ اپنے چیمبر میں موجود تھیں۔ صرف اور صرف ورنگل ویسٹ ( ہنمکنڈہ ) ایم ایل اے ونئے بھاسکر نے ہی شرکت کی۔ وہ ٹی آر ایس پارٹی دفتر میں کارکنوں اور قائدین کے ساتھ اجلاس میں شریک رہے۔ پارٹی میٹنگ کی چھوڑ کر اقلیتی بہبود پروگرام میں شرکت اور پروگرام ختم ہونے کے فوری بعد پارٹی دفتر پہنچ کر کارکنوں سے خطاب کیا۔ ورنگل ایسٹ رکن اسمبلی کنڈہ سریکھا، میئر این نریندر و دیگر عوامی قائدین اقلیتوں کے پروگرام میں شرکت نہیں کی۔ اردو تعلیمی کانفرنس میں بھی یہ قائدین شرکت کرنا ضروری نہیں سمجھا۔ ورنگل کے مسلمانوں کیلئے یہ لمحہ فکر کی بات اقلیتوں کے تئیں ان کی سرد مہری ہے۔

TOPPOPULARRECENT