Monday , August 21 2017
Home / شہر کی خبریں / یوم تاسیس تلنگانہ تقاریب کا دہلی میں انعقاد

یوم تاسیس تلنگانہ تقاریب کا دہلی میں انعقاد

ڈپٹی چیف منسٹر محمود علی نے تلنگانہ بھون میں پرچم کشائی انجام دی ‘ میڈیکل کیمپ کا آغاز

حیدرآباد۔/2جون، ( سیاست نیوز) یوم تاسیس تلنگانہ تقاریب نئی دہلی میں میں بڑے پیمانہ پر منائی گئیں۔ تلنگانہ بھون نئی دہلی میں ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی نے قومی پرچم لہرایا اور شہیدان تلنگانہ کی یادگار پر پھول چڑھا کر خراج پیش کیا۔ انہوں نے تلنگانہ تلی، دستور کے معمار ڈاکٹر بی آر امبیڈکر کے مجسموں پر پھول نچھاور کئے۔ انہوں نے تلنگانہ بھون کے احاطہ میں حکومت کی 2سال کی کارکردگی اور کارناموں پر مشتمل تصویری نمائش کا افتتاح کیا۔نئی دہلی میں حکومت کے خصوصی نمائندے وینو گوپال چاری نے میڈیکل اینڈ ہیلت کیمپ کا آغاز کیا۔ ڈاکٹر وینو گوپال چاری نے ڈپٹی چیف منسٹر محمود علی کا طبی معائنہ کیا۔ یوم تاسیس کے سلسلہ میں نئی دہلی میں واقع رام منوہر لوہیا، صفدر جنگ اور آل انڈیاانسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسس کے مریضوں میں پھل اور مٹھائیاں تقسیم کی گئیں۔ ڈپٹی چیف منسٹر محمود علی نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ گذشتہ 57 برسوں میں تلنگانہ کے ساتھ ہر شعبہ میں ناانصافی کی گئی اور چیف منسٹر چندر شیکھر راؤ کی قیادت میں تلنگانہ حاصل کیا گیا ۔ انہوں نے کہا کہ انتہائی جمہوری اور گاندھیائی انداز میں تلنگانہ تحریک چلائی گئی جو دنیا بھر میں اپنی مثال آپ ہے۔ انہوں نے کہاکہ برقی کے شعبہ میں متحدہ ریاست میں جو بحران تھا

 

اس پر تلنگانہ حکومت نے قابو پالیا ہے۔ متحدہ ریاست میں امن و ضبط کی صورتحال پر کوئی کنٹرول نہیں تھا ۔ محمود علی نے کہا کہ تلنگانہ تیزی سے ترقی کی راہ پر گامزن ہے۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی دور حکومت میں قائم کی گئی 3 ریاستوں کے مقابلہ تلنگانہ ترقی اور دیگر شعبوں میں آگے ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے جامع سروے کے ذریعہ عوامی مسائل کے بارے میں معلومات حاصل کی اور پھر ان کی یکسوئی کیلئے مختلف فلاحی اور ترقیاتی اسکیمات کا آغاز کیا۔ انہوں نے بتایا کہ کئی ایسی اسکیمات جو انتخابی منشور میں شامل نہیں ہیں ان کا آغاز کرکے چیف منسٹر نے عوام دوستی کا ثبوت دیا ہے۔ ’شادی مبارک ‘ اسکیم کا حوالہ دیتے ہوئے محمود علی نے کہا کہ یہ اسکیم انتخابی منشور میں شامل نہیں تھی لیکن غریب اقلیتوں میں شادی کے مسئلہ کی یکسوئی کیلئے انہیں اس اسکیم کے تحت 51000 روپئے امداد فراہم کی جاتی ہے۔ محمود علی نے کہا کہ اقلیتوںکی بھلائی کیلئے حکومت نے کئی اسکیمات کا آغاز کیا جس سے ہزاروں، خاندانوں کو فائدہ پہنچ رہا ہے۔ ارکان پارلیمنٹ جتیندر ریڈی، ونود کمار، تلنگانہ حکومت کے خصوصی نمائندے وینو گوپال چاری ، رام چندروڈو، کانگریس کے رکن راجیہ سبھا آر آنند بھاسکر، مرکزی محکمہ اطلاعات کے کمشنر ایم سریدھر، کانگریس ایم ایل سی پی سدھاکر ریڈی اور دوسرے موجود تھے۔ تلنگانہ بھون کے ملازمین اور نئی دہلی میں مقیم تلنگانہ عوام بالخصوص طلبہ کی کثیر تعداد نے یوم تاسیس تقاریب میں حصہ لیا۔

TOPPOPULARRECENT