Saturday , October 21 2017
Home / شہر کی خبریں / یوم تاسیس تلنگانہ پر خصوصی دعائیں

یوم تاسیس تلنگانہ پر خصوصی دعائیں

حیدرآباد۔ 25۔ مئی  ( سیاست نیوز) یوم تاسیس تلنگانہ کے موقع پر 2 جون کو حکومت کی جانب سے اقلیتوں کی اہم عبادت گاہوں میں بارش اور تلنگانہ ریاست کی بھلائی کیلئے خصوصی دعاؤں کا اہتمام کیا جائے گا ۔ اس کے علاوہ 3 مقامات پر بلڈ ڈونیشن کیمپس منعقد کرنے کا فیصلہ کیا گیا ۔ محکمہ اقلیتی بہبود کی جانب سے یوم تاسیس کے موقع پر جشن تلنگانہ کا اہتمام کیا جارہا ہے جس میں مختلف تہذیبی پروگرام منعقد کئے جائیں گے۔ محکمہ کی جانب سے تاریخی مکہ مسجد ، سی ایس آئی چرچ سکندرآباد اور گردوارہ صاحب امیر پیٹ میں خصوصی دعاؤں کے انعقاد کا فیصلہ کیا گیا ۔ ریاست کے قیام کے بعد سے یہ پہلا موقع ہے جب محکمہ اقلیتی بہبود نے حکومت کی خوشنودی حاصل کرنے کیلئے عبادت گاہوں میں دعاؤں کے اہتمام کا فیصلہ کیا۔ خصوصی دعائیں بارش اور ریاست تلنگانہ کی بھلائی کے علاوہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ کی درازی عمر کیلئے بھی کی جائیں گی۔ اس سلسلہ میں حکومت سے قربت رکھنے والے بعض مذہبی قائدین اور ٹی آر ایس کارکنوں کو شامل کیا جاسکتا ہے ۔ مکہ مسجد میں صبح 10 بجے ، سکندرآباد چرچ میں صبح 10.30 بجے اور گردوارہ صاحب امیر پیٹ میں صبح 9.00 بجے خصوصی دعاء ہوگی۔ کیا ہی بہتر ہوتا کہ حکومت کے وعدوں کی تکمیل کیلئے خصوصی دعا کا اہتمام کیا جاتا۔ خاص طور پر مکہ مسجد میں مسلمانوں کو 12 فیصد تحفظات سے متعلق وعدے کی جلد تکمیل کیلئے خصوصی دعا کا اہتمام کیا جانا چاہئے تھا ۔ دوسری طرف مکہ مسجد وائی ایم سی اے سکندرآباد اور گردوارہ امیر پیٹ میں بلڈ ڈونیشن کیمپ منعقد کئے جائیں گے۔
محکمہ اقلیتی بہبود نے ان تینوں مقامات پر عوام کی کثیر تعداد کی موجودگی کو یقینی بنانے کیلئے بعض تنظیموں کی مدد حاصل کی ہے۔ جشن تلنگانہ کے تحت جن پروگراموں کا انعقاد عمل میں آرہا ہے ، ان میں شام غزل (انڈور اسٹیڈیم) ، کل ہند مشاعرہ (قلی قطب شاہ اسٹیڈیم) اور محفل قوالی (اردو مسکن، خلوت) شامل ہیں۔ عیسائی اور سکھ طبقہ کے تہذیبی پروگرام ہری ہرا کلا بھون سکندرآباد میں منعقد ہوں گے۔ یوم تاسیس کے موقع پر انیس الغرباء اور دیگر یتیم خانوں میں پھل اور مٹھائی تقسیم کی جائے گی۔ محکمہ اقلیتی بہبود نے کل ہند مشاعرہ میں 10 بیرونی شعراء اور 10 مقامی شعراء کو مدعو کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ گزشتہ سال بارش سے مشاعرہ کے انعقاد میں دشواری ہوئی تھی، لہذا اس مرتبہ قلی قطب شاہ اسٹیڈیم میں واٹر پروف شیڈ کی تعمیر کا منصوبہ ہے ۔

TOPPOPULARRECENT