Monday , August 21 2017
Home / کھیل کی خبریں / یونس خان کو بیانات دینے پر وارننگ دی جائے گی

یونس خان کو بیانات دینے پر وارننگ دی جائے گی

پاکستان کے اسٹار بیٹسمن ونڈے ٹیم میں عدم انتخاب پر مایوسی کا شکار ، پی ایس ایل تقریب میں مدعو نہ کرنے کی بات مسترد : شہریار خان

کراچی ؍ لاہور ، 23 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین شہریار خان کا کہنا ہے کہ یونس خان ذرائع ابلاغ میں اپنے ونڈے سلیکشن کے بارے میں جو کچھ بھی کہہ رہے ہیں اس سے ان کی مایوسی ظاہر ہوتی ہے اور انھیں وارننگ دی جائے گی۔ جب شہریار خان سے یہ سوال کیا گیا کہ آخر کیا وجہ ہے کہ پاکستان کرکٹ بورڈ یونس خان اور شاہد آفریدی کی جانب سے مسلسل بیانات دیئے جانے کے باوجود ان کے خلاف ڈسپلن کی خلاف ورزی پر کوئی کارروائی کیوں نہیں کرتا؟ شہریار خان نے کہا: ’’یہ یونس خان کی مایوسی ہے۔ وہ بڑے کرکٹر اور اچھے آدمی ہیں۔انھیں بٹھا کر سمجھایا جائے گا۔ جہاں تک ایکشن کی بات ہے تو وہ سوچا جائے گا کیونکہ ایکشن دو طرح کے ہوتے ہیں ایک بہت سخت اور دوسرا معتدل۔ ان دونوں کے درمیان کرکٹ بورڈ کو کوئی پوزیشن لینی ہوگی لیکن ضرور کچھ نہ کچھ کرنا پڑے گا اور ممکن ہے کہ یونس خان کو متنبہ کیا جائے۔

‘‘ شہریار خان نے یونس خان کے اس دعوے کو مسترد کر دیا کہ پاکستان سوپر لیگ کی تقریب میں انھیں مدعو نہیں کیا گیا تھا۔ انھوں نے کہا کہ اگر انھیں مدعو نہ کیا گیا ہوتا تو وہ اس غلطی کی خود معافی مانگتے۔ شہریار خان نے کہا کہ یونس خان کو دعوت دی گئی تھی لیکن انھوں نے آنے جانے کا خرچ طلب کیا تھا۔ شہریار خان نے اس تاثر کو بھی غلط قرار دیا کہ پاکستان کرکٹ بورڈ نے مبینہ طور پر یونس خان سے کہا ہے کہ اگر وہ ونڈے انٹرنیشنل سے ریٹائرمنٹ کا اعلان کرنے کیلئے تیار ہیں تو انھیں ونڈے ٹیم میں شامل کیا جاسکتا ہے۔

انھوں نے کہا کہ جب تک وہ کرکٹ بورڈ کے چیئرمین ہیں کسی بھی کھلاڑی کو ریٹائرمنٹ پر مجبور نہیں کیا جائے گا۔ 37 سالہ یونس نے گزشتہ ہفتے اسکواڈ میں نام شامل نہ ہونے پر سلیکٹرز کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا تھا۔ یونس خان نے ایک ٹی وی انٹرویو میں کہا : ’’ اگر میں منتخب نہ ہوا تو ونڈے ٹیم کھڑی نہیں ہوسکے گی۔‘‘ چیئرمین پی سی بی شہریار خان نے اس حوالے سے کہا ہے کہ یونس خان جن کی گزشتہ تین سال کے دوران ونڈے میں اوسط کارکردگی 29 میچز میں 18.32 رہی، اس لئے وہ فرسٹریشن کا شکار ہیں۔یونس نے رواں برس کے اوائل ورلڈ کپ کے تین میچز میں محض 43 رنز بنائے تھے مگر ان کی ٹسٹ میچز میں کارکردگی بہترین رہی جن کی 171 رنز کی ناقابل شکست اننگز کے باعث پاکستان نے سری لنکا کے خلاف پالے کیلے ٹسٹ میں 377 رنز کا ہدف حاصل کرلیا۔

TOPPOPULARRECENT