Saturday , June 24 2017
Home / شہر کی خبریں / یونیورسٹیز کو بہتر اور معیاری تعلیم فراہم کرنے پر زور

یونیورسٹیز کو بہتر اور معیاری تعلیم فراہم کرنے پر زور

امبیڈکر اوپن یونیورسٹی میں ملازمین تربیتی سنٹر کا افتتاح ، وزیر تعلیم کڈیم سری ہری اور پروفیسر سیتاراما راؤ وائس چانسلر کا خطاب
حیدرآباد ۔ 10۔ مئی (سیاست نیوز) ڈپٹی چیف منسٹر وزیر تعلیم کڈیم سری ہری نے ریاست کی یونیورسٹیز کو مشورہ دیا کہ وہ بہتر اور معیاری تعلیم کی فراہمی پر توجہ مرکوز کریں۔ ڈاکٹر بی آر امبیڈکر اوپن یونیورسٹی جوبلی ہلز میں کڈیم سری ہری نے آج یونیورسٹی ملازمین کی تربیت سے متعلق سنٹر کی عمارت ( سی ایس ٹی ڈی بلڈنگ ) کا افتتاح کیا ۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے کڈیم سری ہری نے کہا کہ ملک میں اوپن یونیورسٹی طرز تعلیم کے تحت ڈاکٹر بی آر امبیڈکر اوپن یونیورسٹی کا اولین قیام عمل میں آیا تھا ۔ یونیورسٹی نے قیام کے بعد اپنی بہتر کارکردگی اور بہتر تعلیم کی فراہمی کے ذریعہ ہر کسی کی ستائش حاصل کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ 1982 ء میں ڈاکٹر بی آر امبیڈکر اوپن یونیورسٹی کے قیام کا مقصد یونیورسٹی کو باقاعدہ حاضر نہ ہونے والے طلبہ کی تعلیمی ترقی کو یقینی بنانا تھا ۔ اس کامیاب تجربہ کے بعد ملک میں مزید اوپن یونیورسٹیز کا قیام عمل میں آیا ہے ۔ ڈپٹی چیف منسٹر نے یونیورسٹی کی مختلف شعبوں میں خدمات کی ستائش کرتے ہوئے کہا کہ اسی طرح کی خدمات کا سلسلہ جاری رکھنا چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ تعلیم کو درمیان میں ترک کردینے والے افراد کو دوبارہ تعلیم سے جوڑنے میں اوپن یونیورسٹیز اہم رول ادا کرسکتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ کورسس کو جاری رکھتے ہوئے یونیورسٹی کو چاہئے کہ دوسری اوپن یونیورسٹیز میں شروع کئے گئے کورسس کو اختیار کریں۔ انہوں نے کہا کہ روزگار پر مبنی سرٹیفکٹ کورسس کے آغاز کے ذریعہ نوجوانوں کو تعلیم کی طرف راغب کیا جاسکتا ہے۔ سری ہری نے کہا کہ طب کے شعبہ میں بنیادی خدمات پر زیادہ تر کیرالا سے تعلق رکھنے والے طلبہ ہی دکھائی دیتے ہیں ۔ اگر ہمارے طلبہ کیلئے بھی ہیلت کے شعبہ میں سرٹیفکٹ کورس کا آغاز کیا جائے تو انہیں بھی روزگار حاصل ہوسکتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راو نے جب بکریوں کی افزائش کی حوصلہ افزائی کا فیصلہ کیا تو اس بات کا پتہ چلا کہ کئی مقامات پر وٹرنری اسسٹنٹس موجود نہیں ہیں، لہذا یونیورسٹی کو اس طرح کے کورسس کا آغاز کرنا چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ زرعی شعبہ میں بی ایس سی اگریکلچر ڈگری حاصل کرنے والے طلبہ کیلئے بھی کافی مواقع موجود ہیں۔ انہوں نے یونیورسٹی حکام کو مشورہ دیا کہ وہ روزگار پر مبنی اور مقبول عام کورسس پر توجہ دیں۔ سری ہری نے کہا کہ یونیورسٹیز کو مالی طور پر مستحکم کرنے کیلئے چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے جاریہ سال بجٹ میں 420 کروڑ روپئے مختص کئے ہیں۔ سابق میں کبھی بھی یونیورسٹیز کیلئے اس طرح رقم مختص نہیں کی گئی تھی۔ بی آر امبیڈکر اوپن یونیورسٹی کو 20 کروڑ روپئے مختص کئے گئے ہیں ۔ یہ رقم طلبہ اور ملازمین کی سہولتوں ، لیاب اور مرمتی کاموں پر خرچ کئے جائیں گے۔ نئی عمارتوں کی تعلیم بھی اسی رقم سے کی جائے گی ۔ وائس چانسلر پروفیسر کے سیتا راما راؤ نے جاریہ سال بجٹ میں یونیورسٹی کو 20 کرو ڑ روپئے مختص کرنے پر چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ اور ڈپٹی چیف منسٹر کڈیم سری ہری سے اظہار تشکر کیا ۔ انہوں نے کہا کہ طلبہ کی ضرورت کے مطابق نئے کورسس کے آغاز پر توجہ دی جائے گی۔ اعلیٰ تعلیم میں اوپن یونیورسٹیز کی حصہ داری 30 فیصد ہے اسی طرح جاب رکروٹمنٹ میں بھی یونیورسٹی اہم کردار ادا کر رہی ہے ۔ یونیورسٹی کے رجسٹرار سی وینکٹیا نے استقبال کیا۔اس موقع پر اکیڈیمک ڈائرکٹر پروفیسر کرن مائی کے علاوہ ڈائرکٹر تربیتی سنٹر پروفیسر سدھارانی اور یونیورسٹی اسٹاف کی کثیر تعداد موجود تھی ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT