Tuesday , September 26 2017
Home / سیاسیات / یوپی میں بھاری اور معمولی اکثریت سے جیتنے والے امیدوار

یوپی میں بھاری اور معمولی اکثریت سے جیتنے والے امیدوار

راج ناتھ سنگھ کے فرزند کو ایک لاکھ ووٹوں کی اکثریت سے کامیابی، سعیدہ خاتون کو 171 ووٹوں سے شکست

لکھنؤ۔ 12 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) اُترپردیش اسمبلی انتخابات میں ہر طرف بی جے پی کا غلبہ رہا جہاں سب سے زیادہ اور سب سے کم اکثریت سے کامیابی حاصل کرنے والوں میں اکثر بی جے پی کے امیدوار ہی تھے۔ پانچ حلقوں میں اس کے امیدوار ایک لاکھ سے زائد ووٹوں کی اکثریت سے اور 8 حلقوں میں 1000 یا اس سے بھی کم ووٹوں کی اکثریت سے منتخب ہوئے۔ شاہدآباد سے بی جے پی امیدوار 1,50,685 ووٹوں کی بھاری اکثریت سے شکست دی۔ اس کے برخلاف حلقہ ڈومریا گنج میں بی جے پی کے راگھویندر پرتاپ سنگھ نے بی ایس پی کی سعیدہ خاتون کو صرف 171 ووٹوں سے شکست دی۔ حلقہ رتھ میں بی جے پی کے منیشا انوراگی نے گیادین انوراگی کو 1,04,643 ووٹوں سے شکست دی۔ مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ کے فرزند پنکج سنگھ (بی جے پی) نے حلقہ نوئیڈا سے ایس پی کے سنیل چودھری کو 1,04,016 ووٹوں کی اکثریت سے شکست دی۔ بی جے پی کے اوتار سنگھ بھدانا نے میرپور سے ایس پی کے لیاقت علی کو 193 ووٹوں سے شکست دی۔ مبارکپور میں بی ایس پی کے شاہ عالم نے ایس پی کے اکھیلیش یادو کو 688 ووٹوں کی اکثریت سے شکست دی۔ کونڈا کے طاقتور سیاسی لیلار رگھوراج پرتاپ سنگھ عرف راجہ بھیا (ایس پی) نے بی جے پی کے جانکی شرن کو 1,03,647 ووٹوں کی اکثریت سے شکست دی۔

دہلی کے بلدی انتخابات
یوگیندر یادو کی پارٹی بھی مقابلہ میں شامل
نئی دہلی۔ 12 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) عام آدمی پارٹی سے خارج شدہ لیڈر یوگیندر یادو کی قیادت میں تشکیل شدہ نئی جماعت ’’سواراج انڈیا‘‘ نے آج کہا کہ مجوزہ دہلی میونسپل انتخابات مقابلہ کیلئے ٹکٹ کے خواہش مند افراد سے 14 افراد تک درخواستیں وصول کی جائیں گی۔ یہ تنظیم آئندہ ماہ منعقد شدنی بلدی انتخابات کیلئے تاحال 96 امیدواروں کے ناموں کا اعلان کرچکی ہے۔ اس پارٹی نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ ’’درخواستیں قبول کرنے کا عمل 14 مارچ کو 5 بجے شام ختم ہوجائے گا‘‘۔ سواراج انڈیا نے مجلس بلدیہ دہلی کے تمام 272 حلقوں سے مقابلہ کرنے کا اعلان کیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT