Wednesday , October 18 2017
Home / Top Stories / یوپی میں خوفناک بس حادثہ، 24 مسافر زندہ جھلس کر خاکستر

یوپی میں خوفناک بس حادثہ، 24 مسافر زندہ جھلس کر خاکستر

لاری سے تصادم کے بعد بس شعلہ پوش، مسخ نعشوں کی شناخت کیلئے ڈی این اے معائنے
بریلی ۔ 15 جون (سیاست ڈاٹ کام) اترپردیش روڈ ٹرانسپورٹ کارپوریشن کی ایک بس آج صبح کی اولین ساعتوں میں یہاں قومی شاہراہ پر ایک لاری سے ٹکرا کر شعلہ پوش ہوگئی، جس کے نتیجہ میں کم سے کم 24 مسافرین زندہ جھلس کر خاکستر ہوگئے اور دیگر 14 زخمی ہوگئے۔ یو پی کی یہ بس 41 مسافرین کو دہلی سے لے جارہی تھی کہ مشرقی اترپردیش کے علاقہ گونڈا میں قومی دارالحکومت سے تقریباً 250 کیلو میٹر دور قومی شاہراہ نمبر 24 پر باڑہ بائی پاس کے قریب وحشتناک حادثہ کا شکار ہوگئی۔ نعشیں اس حد تک بری حالت میں جھلسی ہوئی پائی گئیں کہ ڈاکٹروں کو ان کی جنس (مرد ؍ عورت) ہونے کی شناخت کرنے میں بھی دشواری محسوس ہورہی ہے۔ چنانچہ صحیح شناخت کیلئے ان تمام کے ڈی این اے ٹسٹ کروائے جائیں گے۔ اترپردیش کے ایک وزیر راجیش اگروال نے اخباری نمائندوں سے کہا کہ ’’مہلوکین کی تعداد 24 تک پہنچ گئی ہے دیگر 14 افراد بری طرح جھلس جانے کے سبب شدید زخمی حالت میں زیرعلاج ہیں‘‘۔ تین مسافر معمولی زخموں کے ساتھ محفوظ بچ نکلنے میں کامیاب رہے۔ ابتداء میں زخمیوں کی تعداد 15 بتائی گئی تھی جس کے بعد مزید ایک زخمی مسافر کے اضافہ کے ساتھ ان کی تعداد 16 ہوگئی تھی جن کے منجملہ دو مسافر دوران علاج فوت ہوگئے۔ سینئر سپرنٹنڈنٹ پولیس جوگیندر کمار نے کہا کہ یو پی ایس آر ٹی سی کی بس اور ٹرک کے درمیان تصادم کا یہ حادثہ رات 1 بجے اور 1:30 بجے کے درمیان پیش آیا۔ کمار نے کہا کہ چھ زخمیوں کی حالت تشوشیناک ہے جنہیں دواخانہ میں شریک کردیا گیا ہے۔ ایک عینی شاہد کے مطابق لاری سے ٹکراؤ کے بعد بس کی ڈیزل ٹینک پھٹ گئی جس کے سبب آگ بھڑک اٹھی اور بس شعلوں کی لپیٹ میں آ گئی۔ بریلی ڈسٹرکٹ ہاسپٹل کے ڈاکٹر سیلیش نے کہا کہ ’’صبح تقریباً 6:45 بجے ہمیں بس حادثے کے مقام سے 22 نعشیں موصول ہوئیں۔ یہ نعشیں بری طرح جھلس جانے کے سبب ناقابل شناخت ہوچکی تھیں حتیٰ کہ مہلوکین کے مرد یا عورت ہونے کی شناخت کرنے میں بھی دشواری محسوس ہورہی تھی‘‘۔ بریلی کے چیف میڈیکل آفیسر ڈاکٹر وجئے یادو نے کہا کہ ’’پوسٹ مارٹم کے بعد ہی مہلوکین میں شامل مردوں اور عورتوں کی صحیح تعداد معلوم ہوگئی‘‘۔

TOPPOPULARRECENT