Saturday , May 27 2017
Home / سیاسیات / یوپی کے تین چوتھائی وزیروں کو شکست فاش

یوپی کے تین چوتھائی وزیروں کو شکست فاش

لکھنؤ 13 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) زعفرانی لہر جو اترپردیش کو بھی بہا لے گئی، اُس میں اکھلیش یادو حکومت کے لگ بھگ تین چوتھائی وزراء کو شکست فاش ہوگئی۔ سماج وادی پارٹی کے سینئر لیڈر اور اسپیکر اسمبلی ماتا پرساد پانڈے بھی اپنی روایتی ایٹوہ نشست بچانے میں ناکام ہوئے اور بی جے پی کے مقابل ہار گئے۔ حتیٰ کہ اُنھیں تیسرا مقام ملا۔ سبکدوش چیف منسٹر اکھلیش یادو کے نمایاں کابینی رفقاء جو الیکشن ہارے اُن میں صدر پارٹی کے قریبی بااعتماد قائدین اروند سنگھ گوپے اور ابھیشک مشرا شامل ہیں جنھیں ترتیب وار رام نگر اور لکھنؤ نارتھ سے شکست ہوئی۔ اکھلیش کا اپنے داغدار گائتری پرجاپتی کی تائید جاری رکھتے ہوئے اُنھیں امیتھی سے دوبارہ نامزد کرنا بھی مہنگا پڑا۔ اُن کے خلاف عصمت ریزی کے الزامات عائد ہیں اور سپریم کورٹ نے کیس میں مداخلت کی ہے لیکن پارٹی نے پرجاپتی کا ساتھ دیتے ہوئے اُنھیں اسمبلی چناؤ کے لئے ٹکٹ بھی دیا۔ دیگر ناکام قائدین و کابینی وزراء میں روی داس مہرورترا، شیوا کانت اوجھا، ضیاء الدین رضوی، اودھیش پرساد ، ونود کمار، رام مورتی ورما، شنک لال ماجھی، رام کرن آریا، برہماشنکر ترپاٹھی، کمال اختر، ریاض احمد اور شاہد منظور شامل ہیں۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT