Sunday , September 24 2017
Home / ہندوستان / یوپی کے دینی مدارس پر سرکولر غیرقانونی

یوپی کے دینی مدارس پر سرکولر غیرقانونی

الہ آباد ہائیکورٹ میں درخواست، امتیازی سلوک کا الزام
الہ آباد ۔ 25 اگست (سیاست ڈاٹ کام) اترپردیش کے اسلامی دینی مدرسوں کے احاطوں میں یوم آزادی تقاریب کے انعقاد سے متعلق رپورٹس داخل کرنے ریاستی حکومت کی ہدایات کو چیلنج کرتے ہوئے الہ آباد ہائیکورٹ میں آج ایک درخواست دائر کی گئی۔ الہ آباد کے ساکن نواب محبوب نے استدلال پیش کیا کہ 8 اگست کو ایک سرکولر جاری کیا گیا تھا جس میں تمام دینی مدرسوں کو اپنے احاطوں میں منعقد کی جانے والی یوم آزادی تقاریب کی تصاویر اور ویڈیو فٹیج داخل کرنے کیلئے کہا گیا تھا۔ یہ سرکولر ’’تعصب و امتیازی سلوک پر مبنی اور غیرقانونی ہے‘‘۔ یوپی کے مدرسہ شکشا پریشد کے رجسٹرار کی طرف سے جاری کیا گیا تھا۔ یہ درخواست اس تنازعہ کے درمیان دائر کی گئی ہے کہ ریاستی حکومت نے تمام دینی مدرسوں میں یوم آزادی تقاریب کے انعقاد کو لازمی قرار دیتے ہوئے ان تقاریب کی ویڈیوگرافی کرتے ہوئے اس کے سی ڈیز داخل کرنے کی ہدایت کی تھی۔ یوم آزادی تقاریب کئی دینی مدرسوں میں منائی گئی تھیں لیکن بریلوی طبقہ نے قومی ترانہ پڑھنے سے انکار کردیا تھا اور کہا تھا کہ اس کے طلبہ علامہ اقبال کا ترانہ ہند ’’سارے جہاں سے اچھا‘‘ پڑھیں گے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT