Thursday , August 17 2017
Home / سیاسیات / یو پی میں اسد اویسی کے جلسہ پر امتناع

یو پی میں اسد اویسی کے جلسہ پر امتناع

حافظ سعید کی زبان بولنے بی جے پی کا الزام ، بہار میں دو مقدمے درج
ممبئی / لکھنؤ ۔ /17 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) شیوسینا نے آج کل ہند مجلس اتحادالمسلمین کے صدر اسد الدین اویسی پر بھارت ماتا کی جئے نعرے لگانے سے انکار پر سخت برہمی ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ ان کی شہریت اور حقوق رائے دہی منسوخ کردینے چاہئیے جو لوگ یہ نعرہ لگانے سے انکار کرتے ہیں انہیں یو پی حکومت میں بھی دو عام جلسے منعقد کرنے کی اجازت دینے سے انکار کردیا ۔ شیوسینا نے کہا کہ مسلم برادری اویسی جیسے لوگوں کے نظریات کی وجہ سے ہی پسماندہ ہے ۔ کانگریس کے ترجمان ال ناصر ذکریا نے الزام عائد کیا کہ شیوسینا کا سیاسی نظریہ منافقت پر مبنی ہے ۔ برہم مجلس نے سماج وادی پارٹی حکومت کے اسے جلسوں کے انعقاد کی اجازت نہ دینے پر کہا کہ حکومت اویسی خاندان سے خوفزدہ ہے ۔ کیونکہ اس نے اقلیتوں کیلئے کچھ بھی نہیں کیا ہے ۔ ریاست کے دو روزہ دورہ کے موقع پر وہ لکھنو میں ایک جلسہ عام سے خطاب کرنے والے تھے لیکن ضلع مجسٹریٹ نے نظم و ضبط کے ابتر ہونے کا اندیشہ ظاہر کرتے ہوئے انہیں جلسہ سے خطاب کی اجازت نہیں دی ۔ تاہم دورہ پر کوئی پابندی عائد نہیں کی ۔ دریں اثناء ممبئی کے علاقہ ناگپاڑہ میں مجلس کارکنوں نے وارث پٹھان کو اسمبلی سے معطل کردینے کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے نعرے لگائے ۔

 

ہم انصاف چاہتے ہیں ، پٹھان کی معطلی منسوخ کرو ۔ مرکزی وزیر این وینکیا نائیڈو نے اسد الدین اویسی کے بیان پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ رضاکاروں کو بھی بھارت ماتا کی جئے کے نعرے پر اعتراض تھا ۔ قاسم رضوی کے پیرو بھی اسی بات کا اعادہ کررہے ہیں ۔ بی جے پی نے اسد الدین اویسی کے نعرہ لگانے سے انکار پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ یہ مادر وطن کی توہین ہے جس کا مقصد سستی شہرت ہے ۔ اسد اویسی حافظ سعید کی زبان میں بات کررہے ہیں ۔ پٹنہ سے موصولہ اطلاع کے بموجب اسد اویسی کے خلاف اکھیل بھارتیہ ودیا پریشد کے قائد رام جی سنگھ نے بکسر میں اور دیہات ایک تار وا کے متوطن محمد تروان انصاری نے گوپال گنج میں غداری کے الزام میں صدر مجلس اتحادالمسلمین کے خلاف مقدمہ درج کروایا ہے ۔ صدر بی جے پی امیت شاہ نے انڈیا ٹوڈے چوٹی کانفرنس میں تقریر کرتے ہوئے کہا کہ بھارت ماتا کی جئے نعرے سے ہندوستان کے 99 فیصد عوام متفق ہیں اور مادر وطن کی ستائش کرنا چاہتے ہیں ۔ یہ نعرہ مادروطن کی ستائش کیلئے ہی لگایا جاتا ہے جو لوگ اس سے متفق نہیں ہے وہ بھی جلد ہی قائل ہوجائیں گے ۔ انہوں نے جواہر لال نہرو یونیورسٹی میں افضل گرو کی برسی کے انعقاد کو ’’قوم دشمن‘‘ کارروائی قرار دیتے ہوئے کہا کہ بی جے پی اپنے اثر و رسوخ میں اضافہ کرے گی ۔

TOPPOPULARRECENT