Thursday , September 21 2017
Home / Top Stories / یو پی میں ٹرین کے 7 کوچس پٹری سے اترگئے

یو پی میں ٹرین کے 7 کوچس پٹری سے اترگئے

کوئی زخمی نہیں ہوا ، دہلی میں بھی راجدھانی ایکسپریس کو حادثہ
سن بھدرا ۔ /7 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) اترپردیش میں چند دنوں میں ایک اور ٹرین حادثہ پیش آیا جس میں جبل پور شکتی پنج ایکسپریس کے 7 کوچس پٹری سے اترگئے ۔ یہ حادثہ آج صبح ضلع سن بھدرا میں اوبرا ڈیم اسٹیشن کے قریب پیش آیا ۔ اس حادثہ سے کسی کے زخمی ہونے کی اطلاع نہیں ہے ۔ ریلوے وزارت کے ترجمان انیل سکسینہ نے یہ بات بتائی ۔ یہ ٹرین جو ہوڑا سے آرہی تھی صبح 6 بجکر 25 منٹ پر دوبرا ۔ ففراکنڈ اسٹیشنوں کے درمیان پٹریوں سے اچھل کر گرگئی جس کی وجہ سے اس روٹ پر ٹریفک متاثر رہی ۔ سن بھدرا کا علاقہ چار ریاستوں ، مدھیہ پردیش ، چھتیس گڑھ ، جھارکھنڈ اور بہار کی سرحدوں سے ملتا ہے ۔ جہاں بائیں بازو انتہاپسند سرگرمیوں کی بڑی تاریخ ہے ۔ لیکن ایڈیشنل سپرنٹنڈنٹ پولیس اودیش سنگھ نے اس حادثہ کے پیچھے کسی نکسلائیٹ کارروائی کے ارکان کو مسترد کردیا ۔ سرکاری ذرائع نے کہا کہ ٹرین تقریباً 40 کیلو میٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے دوڑ رہی تھی ۔ جس کی وجہ سے مسافروں کو کوئی نقصان نہیں پہونچا ۔ ایسٹ سنٹرل ریلوے پی آر او آر کے سنگھ نے کہا کہ ٹرین کی 7 کوچس پٹری سے اترگئے ۔ انہیں بعد ازاں ٹرین سے علحدہ کرکے ٹریفک کو بحال کیا گیا ۔ سن بھدرا مشرقی اترپردیش میں وارانسی سے 80 کیلو میٹر دور واقع ہے ۔ تمام مسافروں کو ٹرین کے ماباقی کوچس میں سوار کرواکر ایک گھنٹہ کے بعد روانہ کیا گیا ۔ اسی دوران دہلی میں بھی راجدھانی ایکسپریس کو حادثہ پیش آیا ۔ دہلی کے منٹو بریج کے قریب راجدھانی ٹرین کا انجن اور پاور ویان پٹری سے اترگئے لیکن کوئی زخمی نہیں ہوا ۔ یہ حادثہ دن کے 11 بجکر 45 منٹ کو پیش آیا ۔

این ڈی اے حکومت کا نام ’’ڈی ریل منٹ سرکار‘‘ : کانگریس
نئی دہلی ۔ 7 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) کانگریس نے آج حکومت پر یکے بعد دیگرے ٹرینوں کے پٹری سے اترجانے کے سلسلہ میں تنقید کرتے ہوئے کہا کہ مودی حکومت کا نام ’’ڈی ریل منٹ سرکار‘‘ رکھا جانا چاہئے۔ کانگریس نے اپنے سرکاری ٹوئیٹر پر تحریر کیا کہ گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران یہ تیسرا حادثہ ہے۔ اس کیلئے کون ذمہ دار ہے کتنے ڈی ریل منٹ وزارت ریلوے کو جواب دہ بنائیں گے اور وہ ان کا نوٹ  لے گی۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT