Friday , October 20 2017
Home / Top Stories / یکساں سیول کوڈ کو ناکام بنانا تمام اُمت مسلمہ کی ذمہ داری

یکساں سیول کوڈ کو ناکام بنانا تمام اُمت مسلمہ کی ذمہ داری

تحریک مسلم شبان کا سیاسی قائدین، علماء اور مشائخین کا اجلاس ‘ جناب زاہدعلی خان، محمدعلی شبیر، احمد شریف اور دیگر کا خطاب
حیدرآباد۔22اکٹوبر(سیاست نیوز) یکساں سیول کوڈ کے نفاذ کی تمام تر کوششوں کو متحدہ طور پر ناکام بنانا امت مسلمہ کی ذمہ داری ہے۔ نرسمہا راؤ کے دور حکومت میں بھی اس طرح کی ایک کوشش کی گئی تھی لیکن اتنے بڑے پیمانے پر یہ کوشش نہیں ہوئی جو آج کی جا رہی ہے۔ امت مسلمہ کو انتہائی منظم و مستحکم انداز میں ان کوششوں کا مقابلہ کرنے تیار ہونا ضروری ہے ۔ جو لوگ شریعت میں مداخلت کی کوشش کر رہے ہیں وہ ہر طرح سے تیاری کر رہے ہیں۔ جناب زاہد علی خان ایڈیٹر سیاست نے تحریک مسلم شبان کی جانب سے منعقدہ سیاسی قائدین‘ علماء و مشائخین کے اجلاس سے خطاب کے دوران یہ بات کہی۔جناب محمد مشتاق ملک کی زیرنگرانی منعقدہ اس اجلاس میں قائد مقننہ تلنگانہ قانون ساز کونسل جناب محمد علی شبیر ‘ ایم ایل سی ٹی آر ایس جناب محمد فرید الدین‘ جناب احمد شریف تلگو دیشم ایم ایل سی آندھرا پردیش‘ جناب چاند باشاہ رکن اسمبلی کدری تلگو دیشم جناب منان ملک رکن اسمبلی جھارکھنڈ‘ جناب سید ذوالفقار سابق رکن اسمبلی بیدر‘ مولانا حامد محمد خان ‘مولانا سید شاہ مظہر حسینی صابری‘ جناب محمد اظہر الدین‘مولانا محمد عبد المغنی مظاہری‘مولانا سید طارق قادری‘ مولانا نصیرالدین ‘ مولانا عبدالعلیم اصلاحی‘ مولانا صفی احمد مدنی‘ مولانا شفیق عالم خان جامعی‘ مولانا محمد معراج الدین علی ابرار‘ کیپٹن ایل۔پانڈو رنگا ریڈی ‘ڈاکٹر کے چرنجیوی‘ جناب محمد خواجہ فخر الدین صدر اقلیتیڈپارٹمنٹ کانگریس‘ جناب شیخ عبداللہ سہیل‘ جناب سیدنظام الدین ‘ جناب یونس اکبانی ‘جناب علی بن سعید الگتمی‘ جناب محمد عبدالستار مجاہد ‘سید شاہ نورالحق قادری و دیگر موجود تھے۔ جناب زاہد علی خان نے صدارتی خطاب میں کہا کہ تمام جماعتوں کے قائدین کو جدوجہد کی راہ اختیار کرنی چاہئے۔انہوں نے بتایا کہ بابری مسجدکی شہادت کے وقت جس طرح ہندستانی مسلمانوں نے اتحاد کا مظاہرہ کیا تھا اسی طرح ایک مرتبہ پھر اپنے اتحاد کا ثبوت دینا وقت کا تقاضہ ہے۔ ایڈیٹر سیاست نے بتایا کہ شہر حیدرآباد کے علاوہ تلنگانہ و آندھرا پردیش کے اضلاع میں سیاست کی جانب سے شعور بیداری کے ساتھ آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ کی مہم میں شدت پیدا کرنے کی اپیل کی جا رہی ہے۔      ( باقی سلسلہ صفحہ 16 پر )

TOPPOPULARRECENT