Wednesday , October 18 2017
Home / Top Stories / یکم جولائی سے ملک بھر میں ادویات کی قلت

یکم جولائی سے ملک بھر میں ادویات کی قلت

جی ایس ٹی کے خلاف میڈیکل شاپ مالکین کا فیصلہ ، میڈیکل کمپنیوں سے بھی ادویات کی تجارت بند
حیدرآباد۔14جون(سیاست نیوز) ملک بھر میں جولائی سے ادویات کی قلت پیدا ہونے کا خدشہ ہے۔ حکومت ہند کی جانب سے آن لائن ادویات کی تجویز کے علاوہ ادویات پر جی ایس ٹی عائد کرنے کے فیصلہ کے خلاف میڈیکل شاپ اوونرس کی جانب سے جاریہ ماہ کے اختتام تک ہی تجارت کا منصوبہ ہے جبکہ ماہ جولائی کے آغاز کے ساتھ ہی ہول سیل میں ادویات کی تجارت میں تخفیف ہونے کا امکان ہے۔ بتایاجاتاہے کہ جی ایس ٹی کے نفاذ سے ریٹیل ادویات کے تاجرین یعنی میڈیکل شاپ مالکین کو 10تا12 فیصد نقصان برداشت کرنا پڑ سکتا ہے۔ بتایاجاتا ہے کہ ادویات ساز کمپنیوں سے تاجرین نے ادویات نہ خریدنے کا فیصلہ کیا ہے اور کہا جا رہا ہے کہ جاریہ ماہ کے اختتام تک تمام دکانات میں موجود اسٹاک فروخت کی جائیں گی۔ بتایاجاتا ہے کہ ریاست بھر میں اسٹاکسٹ کی جانب سے اپنے ریگولر گاہکوں کو اس بات کی ترغیب دی جا رہی ہے کہ وہ اپنے ادویات کا اسٹاک کرلیں کیونکہ جولائی سے ادویات کا حصول مشکل ہوجائے گا۔تلنگانہ کیمسٹس اسوسیشن کا ماننا ہے کہ ریاست میں جولائی کے پہلے ہفتہ سے ہی ادویات کی قلت کی شکایات شروع ہو جائیں گی کیونکہ حکومت کی جانب سے موجودہ ادویات کے اسٹاک کو بھی رعایت فراہم نہ کئے جانے کے سبب میڈیکل شاپ مالکین نیا اسٹاک خریدنے سے قاصر ہیں اور جہاں تک موجودہ اسٹاک کی بات ہے میڈیکل شاپس میں ایک تا دو ماہ کا اسٹاک ہوتا ہے اور جن ادویات کی مدت ختم ہوجاتی ہے انہیں تلف کرنے کیلئے واپس کردیا جاتا ہے۔ اسی لئے جی ایس ٹی کے نفاذ سے قبل مرکزی حکومت سے اپیل کی گئی ہے کہ موجودہ اسٹاک پر جی ایس ٹی کے نفاذ سے رعایت فراہم کی جائے تاکہ قدیم اسٹاک کو پرانے ٹیکس کی بنیاد پر فروخت کیا جاسکے لیکن حکومت ہند کی جانب سے رعایت نہ دیئے جانے کے سبب صورتحال ابتر ہو چکی ہے اور میڈیکل شاپ اوونرس نے نیا اسٹاک پرانے اسٹاک کے ختم ہونے سے قبل نہ خریدنے کا فیصلہ کیا ہے اور ان میں جی ایس ٹی کے متعلق بھی شدید ناراضگی پائی جاتی ہے ۔ آل انڈیا کیمسٹس اینڈ ڈرگسٹس اسوسیشن کے ذمہ داروں کا کہنا ہے کہ حکومت کی جانب سے کئے جانے والے اقدامات کے سبب ادویات سازی صنعت کو بھاری نقصانات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے اور اس نقصان کے خلاف کی جانے والی جدوجہد کے سبب راست عوام بالخصوص مریضوں کو پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑیگا جس کیلئے حکومت ذمہ دارہوگی۔

TOPPOPULARRECENT