Tuesday , May 23 2017
Home / شہر کی خبریں / یکم مئی سے قبل ٹی آر ایس کی محنت و مزدوری کے ذریعہ رقومات کی وصولی

یکم مئی سے قبل ٹی آر ایس کی محنت و مزدوری کے ذریعہ رقومات کی وصولی

چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر بھی محنت کریں گے ، یوم تاسیس سے قبل پارٹی کی حکمت عملی
حیدرآباد۔14اپریل (سیاست نیوز) محنت کش سے زیادہ محنت کش کی نقل کرنے والوں کو اجرت مل جاتی ہے!عالمی یوم محنت کش یعنی یکم مئی سے قبل تلنگانہ راشٹر سمیتی کی جانب سے دو یوم محنت مزدوری کے ذریعہ آمدنی حاصل کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے اور اس دوران خود چیف منسٹر مسٹر کے چندر شیکھر راؤ بھی محنت کش کی شکل میں نظر آئیں گے۔ ٹی آر ایس نے تحریک تلنگانہ کے دوران بھی منفرد طریقوں سے پارٹی فنڈس اکٹھا کرنے کی مہم چلائی تھی اور اس مہم کے دوران کروڑوں روپئے جمع کئے گئے تھے جو تحریک تلنگانہ میں استعمال کئے گئے اور اب اقتدار میں رہنے کے باوجود تلنگانہ راشٹر سمیتی کی جانب سے ریاست بھر میں یوم تاسیس سے قبل محنت مزدوری کے ذریعہ پارٹی فنڈ جمع کرنے کے فیصلہ نے سب کو حیرت میں ڈال دیا ہے لیکن کئی وزراء محنت کش کی نقل اتارنے کے لئے میدان عمل میں بھی پہنچ چکے ہیں۔ محنت کش کو سال بھر محنت کے بعد جو رقم نہیں ملتی محنت کشوں کی نقل اتارنے والے ان سیاسی قائدین کو معمولی محنت کے دوران لاکھوں روپئے وصول ہوجانے کا مکمل یقین ہے کیونکہ انہیں محنت نہیں کرنی ہے بلکہ محنت کی نقل اتارنی ہے۔ مزدور کو شائد پسینہ سوکھنے کے بعد مزدوری وصول کرنے کے لئے کئی چکر کاٹنے پڑیں گے لیکن دو دن کیلئے’ گلابی قلی‘ کا کردار ادا کرنے والے قائدین کو پسینہ بہانے کی بھی شائد ضرورت محسوس نہ ہو اور آمدنی ہوجائے لیکن ان کی یہ کوشش اس بات کی دلیل ہے کہ اقتدار پر رہنے کے باوجود تلنگانہ راشٹر سمیتی کو پارٹی فنڈ کیلئے قلی کا کام کرنے کی ضرورت پیش آرہی ہے جبکہ اقتدار حاصل ہونے کے بعد نہ صرف ارباب اقتدار بلکہ پارٹی سے تعلق رکھنے والے قائدین و کارکنوں کی بھی چاندی ہوجاتی ہے لیکن ٹی آر ایس میں وزراء بھی ’گلابی قلی‘ بنیں گے۔ بتایا جاتا ہے کہ چیف منسٹر مسٹر کے چندر شیکھر راؤ 19 اپریل کو محنت کش کی شکل میں نظر آئیں گے اور وہ بھی اس دن ’گلابی قلی‘ بنیں گے جو عوام کے درمیان پہنچ کر مزدوری کرتے ہوئے آمدنی حاصل کریں گے اور ان کی یہ مزدوری پارٹی فنڈ میں جائے گی۔اقتدار میں رہتے ہوئے عوام کے درمیان پہنچنا اور ان کے بیچ محنت مزدوری کے ذریعہ آمدنی حاصل کرنا سیاست بھی ہوسکتی ہے لیکن ریاستی حکومت کے قائدین کا یہ عمل ان کی سادگی اور خود کو زمین سے جڑے رکھنے کی دلیل بھی ثابت ہو رہا ہے۔گذشتہ دنوں ریاستی وزیر برقی مسٹر جگدیش ریڈی نے گلابی قلی کی حیثیت سے بوجھ منتقل کرتے ہوئے محنت کی اور اس کے ذریعہ آمدنی حاصل کرتے ہوئے اس آمدنی کو پارٹی کے استحکام کے لئے پیش کرنے کا فیصلہ کیا۔ آئندہ دنوں ٹی آر ایس قائدین بشمول ریاستی وزراء ’گلابی قلی‘ کی شکل میں مختلف مقامات پر محنت مزدوری کرتے نظر آئیں گے اور یہ سلسلہ 20اپریل تک جاری رہے گا۔ تلنگانہ راشٹر سمیتی کا ’گلابی قلی‘ محنت کش کا پروگرام عوام بالخصوص تجارتی اور مزدور طبقہ میں کافی مشہور ہوتا جا رہا ہے ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT