Saturday , October 21 2017
Home / Top Stories / یہ میرا ڈریم پراجکٹ ہے: محمود علی

یہ میرا ڈریم پراجکٹ ہے: محمود علی

اراضی اور رقم دونوں کی پیش قدمی، تعلیمی پسماندگی دور ہوگی
حیدرآباد۔ 14۔ مارچ (سیاست نیوز) شائد ڈپٹی چیف منسٹر مسٹر محمد محمود علی وہپہلے سیاست داں ہوں گے جن کا تعلق پرانے شہر سے ہے اور انہیں اس بات کا بھی علم ہے کہ مسلمانوں میں پائی جانے والی تعلیمی پسماندگی ہی مسلمانوں کے مستقبل کو تاریکی میں ڈھکیلنے کی اہم وجہ ہے ۔ ڈپٹی چیف منسٹر کے عہدہ پر فائز ہونے کے بعد کئی ترقیاتی کاموں کو انجام دینے والے ڈپٹی چیف منسٹر نے اب پرانے شہر پر اپنی توجہ مرکوز کی ہے اور اپنے علاقہ سے تعلیمی انقلاب کا آغاز کردیا ہے ۔ پرانے شہر میں معیاری سہولیات اور جدید طرز کے انگریزی میڈیم اسکول کا محمود علی قیام کریں گے اور اس کا کہنا ہے کہ وہ پرانے شہر میں اپنے خوابوں کی تکمیل کے عملی اقدامات کر رہے ہیں۔ اس انگلش میڈیم  اسکول کیلئے نہ صرف 49 لاکھ روپئے جاری کردیئے بلکہ 3400 گز اراضی کو بھی حاصل کرلیا ہے ۔ انگریزی میڈیم اسکول دوسری سرکاری زبان کا درجہ اس اسکول میں رہے گا ۔ تین کروڑ کا تخمینی پراجکٹ ہیں۔ انہوں نے جاریہ سال اپنے فنڈ سے 49 لاکھ روپئے جاری کردیئے اور اپریل سے شروع ہونے والے مالی سال کے فنڈ سے مزید 49 لاکھ جاری کرتے ہوئے راہ ہموار کی ہے ۔ مسٹر محمود علی نے بتایا کہ یہ اسکول پرانے شہر کا مثالی اسکول رہے گا ۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ اس اسکول کے ط لبہ سرکاری و کارپوریٹ شعبوں میں ملازمت حاصل کرنے کے اہل اور دیگر مسابقتی امتحانات میں اپنی صلاحیتوں کو منوائیں گے۔ڈپٹی چیف منسٹر تلنگانہ مسٹر محمد محمود علی نے پرانے شہر کے نونہالوں کو زیورتعلیم سے آراستہ کرنے کیلئے سعیدآباد میں 3 کروڑ روپئے کے مصارف سے انگریزی میڈیم پرائمری اسکول قائم کرنے کا اعلان کیا ہے اور عاجلانہ کاموںکی انجام دہی کیلئے 49 لاکھ روپئے جاری کردیا ہے۔ پرانے شہر سے تعلق رکھنے والے ڈپٹی چیف منسٹر و ریاستی وزیرمال مسٹر محمد محمود علی قوم کی ترقی و بہبود بالخصوص مسلمانوں کو اعلیٰ تعلیم کی تمام بنیادی سہولتوں کی فراہمی کیلئے سنجیدہ ہے۔ انہوں نے حلقہ اسمبلی ملک پیٹ کے سعیدآباد میں مسجد یحییٰ پاشاہ سے متصل 3,400 مربع گز اراضی پرانگلش میڈیم پرائمری اسکول قائم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ نئے تعلیمی سال سے طلبہ کو تعلیم فراہم کرنے کیلئے اسکول کے قیام سے متعلق محکمہ تعلیم سے تمام منظوریاں حاصل کرلی ہے اور ضروری کارروائیوں کی تکمیل کے بعد تعمیری کاموں کا بھی آغاز کردیا ہے اور اس کیلئے 49 لاکھ روپئے بھی جاری کردیئے گئے ہیں۔ مسٹر محمد محمود علی نے بتایا کہ وہ طلبہ کو بالخصوص مسلم طلبہ کو عصری تعلیم سے آراستہ کرنا چاہئے۔ یہ ان کا ڈریم پراجکٹ ہے جس پر 3 کروڑ روپئے خرچ کئے جائیں گے۔ ڈپٹی چیف منسٹر نے کہا کہ انہیں اپنے فنڈز کو قوم کی ترقی پر خرچ کرتے ہوئے کافی مسرت ہورہی ہے۔ قوم کا مستقبل سنوارنے کی غرض سے اسکول قائم کیا جارہا ہے۔ مسٹر محمد محمود علی نے کہا کہ وہ پرانے شہر کی ترقی، عوام کو بنیادی سہولتوں کی فراہمی اور دیگر ضروری کاموں کی انجام دہی کیلئے ایک منصوبہ رکھتے ہیں۔ انگریزی میڈیم اسکول کا قیام اس کا ایک حصہ ہے۔ انہوں نے کہاکہ قوم کی پسماندگی کی اصل وجہ ناخواندگی ہے اور ترقی کی اہم وجہ تعلیم ہوتی ہے۔ اس لئے تعلیم کو خصوصی توجہ دے رہے ہیں۔ سابق حکومتوں نے ایک منظم سازش کے تحت مسلمانوں کو زندگی کے تمام شعبہ حیات میں نظرانداز کیا ہے۔ صرف جھوٹے وعدے کرتے ہوئے انہیں ووٹ بینک کی طرح استعمال کیا ہے۔ تاہم تلنگانہ حکومت اقلیتوں کی ترقی و بہبود کے معاملے میں عہد کی پابند ہے۔ چیف مسٹر مسٹر کے چندرشیکھر راؤ اقلیتوں کی ترقی و بہبود کیلئے عملی اقدامات کرتے ہوئے مسلمانوں کا اعتماد حاصل کررہے ہیں۔ تلنگانہ حکومت نے مسلمانوں کی تعلیمی پسماندگی دور کرنے کیلئے 70 انگریزی میڈیم ریزیڈنشیل اسکولس قائم کرنے کا اعلان کیا ہے۔ مسٹر محمد محمود علی نے کہا کہ وہ پرانے شہر میں بنیادی سہولتوں سے آراستہ اسکول قائم کررہے ہیں جہاں معیاری تعلیم فراہم کرتے ہوئے ان میں خوداعتمادی پیدا کرنے کے اقدامات کئے جائیں گے تاکہ وہ مسابقتی میدانوں میں اپنی صلاحیتوں کا بھرپور مظاہرہ پیش کرسکے۔

TOPPOPULARRECENT