Tuesday , October 17 2017
Home / شہر کی خبریں / ۔10لاکھ روپئے سالانہ آمدنی پر پکوان گیس سبسیڈی برخاست

۔10لاکھ روپئے سالانہ آمدنی پر پکوان گیس سبسیڈی برخاست

جاریہ ماہ کے آخر تک صارفین کی نشاندہی، قواعد پر سختی سے عمل آوری، مرکزی حکومت کا فیصلہ

حیدرآباد۔16مارچ ( سیاست نیوز) مرکزی حکومت کی جانب سے 10لاکھ سالانہ آمدنی رکھنے والے پکوان گیس صارفین کی سبسیڈی کو برخواست کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے اور اس فیصلہ پر سختی سے عمل آوری کیلئے جاریہ ماہ کے اواخر تک ایسے صارفین کی نشاندہی کرلی جائے گی جو سالانہ دس لاکھ روپئے آمدنی رکھتے ہوئے  پکوان گیس پر سبسیڈی حاصل کررہے ہیں ۔ مرکزی حکومت نے سبسیڈی کے اعلان کے وقت ہی اس بات کی صراحت کردی تھی کہ جو شہری دس لاکھ سے زائد آمدنی رکھتے ہیں انہیں سبسیڈی کی رقم نہیں دی جائے گی لیکن میکانزم نہ ہونے کے سبب ایسے افراد کی نشاندہی مشکل ہورہی ہے مگر اب حکومت نے گذشتہ ایک ہفتہ سے ایک مہم شروع کی ہے جس میں ایس ایم ایس کے ذریعہ پکوان گیس صارفین کو مطلع کیا جارہا ہے کہ اگر وہ دس لاکھ سے کم سالانہ آمدنی رکھتے ہیں تو اپنے ڈسٹری بیوٹرس کے پاس ایک ڈیکلریشن جمع کروائیں تاکہ انہیں حاصل ہونے والی سبسیڈی کا سلسلہ جاری رہے ۔ قومی سطح پر دس لاکھ سے زائد آمدنی رکھنے والے ایسے تین لاکھ افراد کی نشاندہی کی گئی ہے جو پکوان گیس پر سبسیڈی اب تک حاصل کررہے تھے لیکن آئندہ سیلنڈر کی تبدیلی کے ساتھ انہیں سبسیڈی کی اجرائی کا سلسلہ بند ہوجائے گا ۔

علاوہ ازیں وزارت پٹرولیم و قدرتی گیس کی جانب سے محکمہ انکم ٹیکس کے پاس موجود تفصیلات اکٹھا کرتے ہوئے  ایسے صارفین کی نشاندہی کی جارہی ہے جو دس لاکھ سے زائد آمدنی رکھنے کے باوجود گیس پر سبسیڈی کی رقم حاصل کررہے ہیں ۔ بتایا جاتا ہے کہ مرکزی حکومت نے سبسیڈی حاصل کرنے والوں کی تعداد میں تخفیف اور حکومت کے خزانہ پر ہونے والے اثرات سے بچاؤ کیلئے سخت گیر اقدامات کا آغاز کیا ہے جس کے تحت اُن تمام افراد کی نشاندہی کی جائے گی جو سبسیڈی کیلئے اہل نہ ہوتے ہوئے سبسیڈی حاصل کررہے ہیں۔ ذرائع کے بموجب سبسیڈی اور گیس سیلنڈر کے علاوہ بینک اکاؤنٹ سے آدھار کارڈ کے مربوط ہونے کے سبب حکومت کو بہ آسانی تمام تفصیلات حاصل ہورہی ہیں جو محکمہ انکم ٹیکس کے ذریعہ ٹیکس دہندگان کی فہرست میں شامل ہیں اور دس لاکھ سے زائد کی آمدنی دکھا رہے ہیں انہیں سبسیڈی کی رقم روکنے کیلئے اقدامات کئے جانے لگے ہیں ۔ وزارت پٹرولیم و قدرتی گیس کے عہدیداروں کا کہنا ہے کہ حکومت صارفین کی جانب سے ڈیکلریشن داخل کئے جانے تک کا انتظار نہیں کرے گی بلکہ اپنے طور پر بھی اس بات کا جائزہ لے گی کہ ایسے کتنے افراد ہے جو اہل نہ ہونے کے باوجود سبسیڈی کی رقم حاصل کررہے ہیں ۔ نااہل افراد جو سبسیڈی حاصل کررہے ہیں ان کے خلاف کارروائی کے متعلق بتایا جاتا ہے کہ فوری طور پر کوئی کارروائی تو نہیں کی جائے گی مگر سبسیڈی کی اجرائی کا سلسلہ منقطع کردیا جائے گا ۔

TOPPOPULARRECENT