Thursday , August 17 2017
Home / ہندوستان / ۔2 سے زیادہ بچے پیدا کرنے پر سرکاری نوکری سے محرومی کا خطرہ

۔2 سے زیادہ بچے پیدا کرنے پر سرکاری نوکری سے محرومی کا خطرہ

گوہاٹی، 9 دسمبر(سیاست ڈاٹ کام) مدارس میں جمعہ کو ہونے والی چھٹی کو بند کرنے کے بعد اب آسام حکومت آباد ی پر قابو پانے کے لئے ایک بل لانے کا منصوبہ بنارہی ہے جس میں دو سے زیادہ بچے پیدا کرنے پر سرکاری نوکری سے ہاتھ دھونا پڑے گا۔اگر ریاستی حکومت اپنی اسکیم کو عملی شکل دے دیتی ہے تو اگلے سال مارچ میں اسمبلی میں آباد ی کنٹرول سے متعلق بل کا مسودہ پیش کیا جائے گا جس میں ایک خاندان میں دو بچوں کی حد طے کی جائے گی۔ اس کے التزامات کے تحت اگر کسی امیدوار کو دوسے زیادہ بچے ہو ں گے تو میونسپل انتخابات میں اس کی امیدواری مسترد کردی جائے گی۔سیکنڈری سطح کے اسکولوں میں آبادی کنٹرول پالیسی کو نصاب کا حصہ بنایا جائے گا۔ آسام کے وزیر تعلیم ہیمنت بسوا شرما نے کہا کہ بی جے پی کی قیادت والی حکومت آبادی پر کنٹرول کے لئے راجستھان حکومت کے ماڈل کو اپنائے گی لیکن اس سے ایک قدم آگے بڑھتے ہوئے آسام حکومت آبادی کنٹرول بل کو اسمبلی میں پیش کرکے اسے مستقل قانون کی شکل دے گی۔حکومت میں دوسرے نمبر کی حیثیت رکھنے والے مسٹر شرما نے اس سے پہلے کہا تھا کہ ریاست کے گیارہ اضلاع میں مسلم آبادی نے مقامی اسمیہ لوگوں کو پیچھے چھوڑ دیا ہے اور آسام کی بدلتی ہوئی آبادی سے مقامی لوگوں کو خطرہ ہے ۔ اسی کے ساتھ انہوں نے بنگلہ دیش سے آئے ہندووں کو ہندوستانی شہریت دینے کی وکالت کی تاکہ ریاست میں ہندووں کی مجموعی آبادی کو بڑھایا جاسکے ۔انہوں نے بتایا کہ آبادی کنٹرول پالیسی کا خاکہ تیار کرنے کے لئے ایک اعلی سطحی کمیٹی قائم کی گئی ہے جو اگلے 45دنوں میں اپنی رپورٹ سونپ دے گی۔

TOPPOPULARRECENT