Thursday , August 24 2017
Home / ہندوستان / ۔2006ء سنکٹ موچن مندر دہشت گرد حملہ ،فیصلہ سے عین قبل جج کا تبادلہ ، دفاعی وکلاء حیران

۔2006ء سنکٹ موچن مندر دہشت گرد حملہ ،فیصلہ سے عین قبل جج کا تبادلہ ، دفاعی وکلاء حیران

ممبئی6جون (سیاست ڈاٹ کام) اترد یش کے وارانسی میں واقع مشہور سنکٹ موچن مندر میں 2006ء میں ہوئے دہشت گرد واقعہ جس میں 28 افراد ہلاک اور 100 سے زائد زخمی ہوئے تھے ، معاملے کی سماعت کل اس وقت ایک بار پھر تھم گئی جب خصوصی عدالت کے جج کا تبادلہ کردیا گیا۔ تبادلہ کا حکم نامہ ملتے ہی جج کو فیصلہ سنانے سے قبل ہی جانا پڑا۔ یہ اطلاع آج یہاں ممبئی میں ملزم کو قانونی امداد فراہم کرنے والی تنظیم جمعیۃ علماء مہاراشٹر(ارشد مدنی) قانونی امداد کمیٹی کے سربراہ گلزار اعظمی نے دی۔انہوں نے بتایا کہ ملزم مفتی ولی اللہ کے معاملے میں تمام سرکاری گواہوں کے بیانات مکمل ہوچکے تھے اور استغاثہ اور دفاع کی حتمی بحث کا اختتام بھی ہوچکا تھا صرف فیصلہ کا انتظار تھا لیکن سیشن جج کے اچانک تبادلے سے ملزم اور اس کے اہل خانہ سمیت دفاعی وکلاء کو شدید دھکہ لگا ہے کیونکہ اب دفاعی وکلاء کو پھر سے عدالت کے سامنے ملزم کی بے گناہی کے حقائق پیش کرتے ہوئے بحث کرنا پڑے گا۔گلزار اعظمی نے کہا کہ وہ اس مقدمہ میں ہونے والی تاخیر کے خلاف ہائی کورٹ سے رجوع ہونے کی تیاری میں ہیں اور اس تعلق سے دفاعی وکلاء کو ہدایت دی گئی ہے ۔
نئے جج نند کمار کے عہدہ سنبھالنے کے بعد ہی سرکاری گواہان کو دوبارہ گواہی کیلئے طلب کئے جانے والے معاملے پر کوئی فیصلہ ہو پائے گا۔

TOPPOPULARRECENT