Wednesday , October 18 2017
Home / ہندوستان / ۔357 عہدیدار اور 24 آئی اے ایس آفیسرس کیخلاف کارروائی

۔357 عہدیدار اور 24 آئی اے ایس آفیسرس کیخلاف کارروائی

خراب سرویس ریکارڈ رکھنے والوں کو سبق سکھانا مودی حکومت کا منصوبہ
نئی دہلی ۔ 25 جولائی ۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) مودی حکومت نے نظم و نسق کو بہتر بنانے کیلئے سخت اقدامات شروع کئے ہیں۔ خراب سرویس کا ریکارڈ رکھنے والے 357 عہدیداروں اور 24 آئی اے ایس آفیسروں کیخلاف کارروائی کی جارہی ہے ۔ وزارت پرسونل کے ایک سینئر عہدیدار نے کہا کہ مودی حکومت نے خراب سرویس ریکارڈ رکھنے والے سرکاری اعلیٰ عہدیداروں کے خلاف کارروائی کرنے کا فیصلہ کیاہے ۔ اس کارروائی میں وقت سے پہلے ریٹائرمنٹ اور ان کے مشاہیر میں کٹوتی شامل ہے۔ جن عہدیداروں کیخلاف کارروائی کی جارہی ہے ان میں 381 سیول سرویسیس آفیسر ہیں ۔ ان میں 24 آئی اے ایس آفیسر بھی شامل ہیں۔ ان کے خلاف ناقص کارکردگی یا فرائض سے پہلوتہی اور غیرقانونی سرگرمیوں میں ملوث ہونے جیسے الزامات ہیں۔ بیوروکریسی کو جوابدے بنانے کو یقینی بنانے کیلئے مودی حکومت نے بہتر کارکردگی کی دو شرائط رکھی ہیں۔ ایک شرط ایمانداری اور دوسری کارکردگی ہے ۔ اچھی حکمرانی کا مقصد پورا کرنے کیلئے ان دو شرائط پر عمل کرنا ضروری ہے ۔ ڈسپلین اور جوابدہی کا جذبہ بیورو کریسی میں پیدا کرنا حکومت کا مقصد ہے ۔ 2953 آل انڈیا سرویسیس کے بشمول 11828 گروپ آف آفیسرس کے ریکارڈ کا جائزہ لیا گیا ہے جس میں 19717 گروپ بی آفیسرس کے سرویس ریکارڈ سے پتہ چلا ہے کہ یہ لوگ اپنے دورِ ملازمت کے دوران بدعنوانیوں میں ملوث رہے ہیں ۔ وزیراعظم کو پیش کردہ رپورٹ میں 381 بیورو کریٹس کے خلاف کی گئی کارروائی کی تفصیلات پیش کی گئی ہے ۔ 21 سیول سروینٹس جس میں 10 آئی اے ایس آفیسر ہیں ملازمت سے ہٹادیا گیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT