Saturday , September 23 2017
Home / سیاسیات / ۔50 ماہ میں وہ کر دکھانے کا تیقن جو دوسروں نے 50 سال میں نہیں کیا، وارناسی میں نریندر مودی کی تقریر

۔50 ماہ میں وہ کر دکھانے کا تیقن جو دوسروں نے 50 سال میں نہیں کیا، وارناسی میں نریندر مودی کی تقریر

VARANASI, SEP 18 (UNI):- Prime Minister Narendra Modi addressing a function organised by the Rickshaw Sangh in Varanasi on Friday. UNI PHOTO-38U

وارناسی ۔ 18 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) کانگریس کی ’’غریبی ہٹاؤ‘‘ مہم پر تنقید کرتے ہوئے وزیراعظم نریندر مودی نے آج کہا کہ جو لوگ غریبوں کے معیار زندگی میں اوریہاں تک کہ ان کے بینک کھاتوں میں اپنے 50 سالہ دوراقتدار میں کوئی بھی تبدیلی نہیں لا سکے وہ اب ان کی حکومت پر اعتراض کررہے ہیں۔ وزیراعظم نے اپنے لوک سبھا حلقہ کے پہلے دورہ کے موقع پر جو 8 ماہ کیا جارہا ہے، دعویٰ کیا کہ انسداد غربت اقدامات مناسب سمت میں نہیں ہیں اور انتخابات کے وقت ہی ’’روایت‘‘ کے طور پر ان کی بات کی جاتی ہے۔ انہوں نے جن دھن یوجنا پر تنقید کرنے والوں کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے غریبوں کو قبل ازیں بینکوں کھاتے کھولنے میں مدد کی ہے۔ وہ حال ہی میں کھولے ہوئے بینک کھاتوں کو اس اسکیم کے تحت استعمال کرنے کے بارے میں فکرمندی سے چھٹکارا حاصل کرچکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ان لوگوں نے 50 سال میں جو نہیں کیا وہ 50 ماہ میں کر دکھائیں گے۔ وہ یہی کہنے یہاں آئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم 40، 50 سال سے غریبی ہٹاؤ کا نعرہ سن رہے ہیں۔ انتخابات میں بھی ہم غریبوں کیلئے انسداد غربت پروگراموں کے بارے میں سنتے ہیں۔ یہ روایت بن گئی ہے کہ غریبوں اور ان کی بھلائی کی بات کی جائے۔ انہوں نے کہا کہ اس روایت سے باہر نکلنے کی ضرورت ہے۔ وزیراعظم نے کہا کہ اب تک اس سلسلہ میں تمام تجربات کا مطلوب نتیجہ برآمد نہیں ہوسکا اور ہم غریبوں کی زندگی میں مطلوبہ تبدیلی لانے کے قابل نہیں بن سکے۔ انہوں نے کہا کہ میں کسی حکومت کو الزام نہیں دینا چاہتا بلکہ ان اشیاء پر توجہ دینا چاہتا ہوں، جن کے ذریعہ غریب غربت سے باہر نکل سکتے ہیں۔

 

وزیراعظم نے حیرت ظاہر کی کہ کیوں کوئی بھی تعلیم یافتہ نہیں ہے۔ ماضی میں کسی بھی سیاستداں نے بینک کھاتے غریبوں کیلئے کیوں نہیں کھولے تھے۔ انہوں نے کہا کہ 25 سال قبل ملک کے بینکوں کو قومیا لیا گیا لیکن اس سے غریبوں کو ان مالی اداروں تک رسائی حاصل نہ ہوسکی۔ کوئی بھی تعلیم یافتہ شخص کسی سیاستداں سے کبھی یہ سوال نہیں کرتا کہ غریبوں کے لئے بینکوں کھاتے کیوں نہیں کھولے گئے۔ سمجھ لیا گیا تھا کھاتے خود بخود کھل جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم جن دھن یوجنا کے تحت 18 کروڑ سے زیادہ بینک کھاتے کھولے جاچکے ہیں اور غریبوں میں 30 ہزار کروڑ روپئے کی رقم ان کی حکومت تشکیل پانے کے بعد سے اب تک جمع کی ہے۔ جو لوگ غریبوں کے لئے بینک کھاتہ نہیں کھول سکے آج اس مسئلہ پر شفافیت کی خواہش کررہے ہیں۔ انہیں فکر ہیکہ کیا ہم نے جو نئے بینک کھاتے کھولے ہیں، کارکرد ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بہتر ہوتا کہ 40 تا 50 سال کے دوران غربت زدہ عوام بینکوں کے دروازہ پر کھڑے رہے۔ انہوں نے مجھ سے ایسے سوالات کئے ہیں۔ آج یہ لوگ وہ سب کچھ حاصل کرچکے ہیں جو انہیں 50 سال میں حاصل نہیں ہوا تھا۔ انہوں نے تیقن دیا کہ وہ 50 ماہ میں وہ سب کچھ کر دکھائیں گے جو دوسروں نے 50 سال میں نہیں کیا۔ مودی نے ہنر کے فروغ پر زور دیتے ہوئے کہا کہ اگر ٹیکنالوجی غریب ترین عوام کی زندگیوں میں داخل ہوجائے تو وہ زیادہ کما سکتے ہیں اور خودمکتفی بن سکتے ہیں۔ قبل ازیں 101 ای رکشہ اور مزید 501 سیکل رکشہ غریبوں میں تقسیم کئے جو زندگی بھر اسی رکشہ کے مالک نہیں بن سکے تھے۔ مودی نے کہا کہ ان کا یہ پروگرام صرف چند لوگوں کی زندگی تبدیل کرنے کیلئے نہیں ہے بلکہ یہ ایک نیا آغاز ہے جو کاشی اور اس کے غریب عوام کے مستقبل کو تبدیل کرکے رکھ دے گا۔ 8 ماہ بعد انہوں نے اپنے حلقہ انتخاب کا دورہ کیا، جس کا طویل مدت سے انتظار کیا جارہا تھا۔ ان کا دورہ گذشتہ مرتبہ دو بار منسوخ ہوچکا ہے کیونکہ اس علاقہ میں زبردست بارش ہورہی تھی۔

TOPPOPULARRECENT