Friday , October 20 2017
Home / دنیا / بیٹوں کی ختنہ کا مقدمہ، مسلم باپ ہار گیا

بیٹوں کی ختنہ کا مقدمہ، مسلم باپ ہار گیا


لندن ۔ 19 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) برطانیہ کا ایک مسلم باپ جو الجیریائی نژاد ہے، اپنی انگریز بیوی سے پیدا ہونے والے بیٹوں کی ختنہ کروانے کا مقدمہ عدالت میں ہار گیا۔ لڑکوں کی عمر الترتیب 6 اور 4 سال ہے۔ برطانیہ کی ہائیکورٹ میں یہ تنازعہ اس وقت پہنچ گیا جبکہ اس کے والدین کے درمیان ختنہ کے بارے میں اختلاف پیدا ہوا تھا۔ لڑکوں کا باپ انگلستان میں 15 سال سے مقیم تھا۔ اس کا دعویٰ تھا کہ ختنہ کروانا مسلم مذہبی عقیدہ کے مطابق ہے اور یہ بچوں کے حق میں بھی بہتر ہے۔ تاہم بچوں کی ماں چاہتی تھی کہ بچوں کی مرضی ظاہر ہونے کی عمر تک انتظار کیا جائے۔ مقدمہ کی تفصیلات فیصلہ ہونے کے بعد منظرعام پر آئیں۔ تاہم جج نے ماں باپ دونوں کی شخصیت کے بارے میں انکشاف نہیں کیا۔ صرف اتنا بتایا کہ دونوں کی عمریں 30 سے 40 سال کے درمیان ہیں۔
برطانیہ کی جیلوں میں ائمہ کی جانب سے
انتہاء پسند لٹریچر کی تقسیم
لندن ۔ 19 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) ائمہ نے جنہیں برطانیہ کی جیلوں میں نماز پڑھانے کیلئے مقرر کیا گیا ہے، معمول کے مطابق مسلم قیدیوں میں انتہاء پسند لٹریچر تقسیم کررہے ہیں۔ ا س بارے میں ایک رپورٹ کے ذریعہ اس کا انکشاف ہوا۔ ملک کے جیل خانوں کے نظام پر نظرثانی کے دوران وزیرانصاف برطانیہ مائیکل گو نے گذشتہ سال معلوم کیا کہ انتہاء پسند ورقیے اور سی ڈیز نومبر سے 10جیلوں میں دستیاب ہوئے۔ یہ لٹریچر قید خانہ کے عبادت کے کمروں میں کتابوں کی الماری میں رکھا گیا تھا۔ اخباری اطلاع کے بموجب وائیٹ ہال کے ذرائع نے اس کی اطلاع دی ہے۔

TOPPOPULARRECENT