Thursday , August 17 2017
Home / Top Stories / مستحکم تلنگانہ کی تشکیل آئندہ نسل کے درخشاں مستقبل کی ضمانت

مستحکم تلنگانہ کی تشکیل آئندہ نسل کے درخشاں مستقبل کی ضمانت

غربت کا خاتمہ اور تمام طبقات کی فلاح و بہبود حکومت کی اولین ترجیح ، پریڈ گراونڈ پر یوم تاسیس تلنگانہ تقریب سے چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ کا خطاب

حیدرآباد۔ 2 جون (سیاست نیوز) چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے کہا کہ تلنگانہ عوامی طاقت کے ذریعہ ترقی کی راہ پر گامزن ہے اور حکومت ‘ریاست سے غربت کا خاتمہ کرنے کیلئے کوشاں ہے اور تمام طبقات کی فلاح و بہبود کو ترجیح دی جا رہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ عوامی معیار زندگی میں بہتری سے ہی ریاست کی ترقی ممکن ہوسکتی ہے۔ آج یوم تاسیس تلنگانہ کے موقع پر سکندرآباد پریڈ گراؤنڈ پر منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے چیف منسٹر نے کہا کہ وہ تلنگانہ عوام کی ترقی کے خواہاں ہیں اور ان کی حکومت میں تلنگانہ کی ترقی سے متعلق مکمل توقعات وابستہ کئے ہوئے ہیں۔ قبل ازیں کے سی آر نے پریڈ گراؤنڈ پر پرچم کشائی انجام دی اور گارڈ آف آنر کی سلامی لی۔ انہوں نے کہا کہ عوامی خدمات کیلئے وہ اپنے آپ کو وقف کررہے ہیں۔ چیف منسٹر نے کہا کہ نو تشکیل شدہ ریاست تلنگانہ میں گزشتہ دو سال حکومت نے عوامی مسائل کی یکسوئی پر توجہ مرکوز کی اور ان دو سال میں کئی مشکلات و رکاوٹوں کے باوجود حکومت مسائل کی یکسوئی کررہی ہے۔ چیف منسٹر نے تلنگانہ میں آبپاشی پراجیکٹس کے تعمیری کاموں میں آندھرا پردیش کی جانب سے پیدا کی جانے والی رکاوٹوں کا تذکرہ کیا اور کہا کہ دریائے کرشنا، گوداوری پر حکومت تلنگانہ نے آبپاشی پراجیکٹس کے کاموں کا آغاز کیا لیکن ان کے تعلق سے آندھرا پردیش کو اعتراض ہے۔ انہوں نے حکومت آندھرا پردیش کی کوششوں پر برہمی کا اظہار کیا اور کہا کہ تلنگانہ کے آبپاشی پراجکٹس کے کاموں کیلئے حکومت مہاراشٹرا اور حکومت کرناٹک مکمل تعاون کررہی ہیں۔ حکومت آندھرا پردیش غیرضروری رکاوٹیں پیدا کررہی ہے۔ چیف منسٹر کے سی آر نے آندھرا پردیش کو انتباہ دیا اور کہا کہ اس کے کھیل اب چلنے والے نہیں ہیں بلکہ حکومت تلنگانہ کو دونوں دریاؤں سے حاصل ہونے والے پانی کے ایک قطرے کو بھی ضائع ہونے نہیں دیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ ‘ اب آندھرا پردیش سے کوئی سمجھوتہ نہیں کریگی۔ کے سی آر نے یوم تاسیس تلنگانہ کی عوام کو مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ جدوجہد آزادی کے طرز پر جدوجہد کرکے تلنگانہ کو حاصل کیا گیا۔ اس جدوجہد میں تشدد کے واقعات پیش نہیں آئے ۔ چیف منسٹر نے کہا کہ پانی، رقومات اور ملازمتوں کی فراہمی میں ناانصافیاں ہی جدوجہد شروع کرنے کی بنیاد رہیں۔ انہوں نے جدوجہد تلنگانہ میں عظیم قربانیوں پر شہیدان تلنگانہ کو خراج عقیدت پیش کیا اور کہا کہ حکومت نے انتخابات میں کئے اپنے وعدوں کے علاوہ انتخابی منشور میں نہ کئے ہوئے بعض وعدوں کو بھی پورا کرنے اقدامات کررہی ہے جس کی وجہ سے تلنگانہ عوام میں ہماری حکومت ہونے کا تاثر پایا جارہا ہے۔

چیف منسٹر نے کہا کہ آج ہماری رقومات ہم خود خرچ کرنے کے موقف میں ہیں۔ علاوہ ازیں سنہرے تلنگانہ کی تعمیر کی راہ ہموار کی جارہی ہے۔ چندر شیکھر راؤ نے کہا کہ آج تلنگانہ میں اپنے منصوبہ جات از خود مرتب کرنے کے موقف میں ہے اور صاف و شفاف نظم و نسق عوام کو بہبم پہونچانے کے اقدامات کئے جارہے ہیں۔ چیف منسٹر نے کہا کہ تلنگانہ کیلئے انتہائی مضبوط و طاقتور بنیاد ڈالنے پر آئندہ نئی نسل کا مستقبل درخشاں بن سکے گا۔ انہوں نے کہا کہ ریاست میں غریب لڑکیوں کی شادی سے متعلق درپیش مسائل کی یکسوئی کیلئے حکومت نے کلیان لکشمی اور غریب مسلم لڑکیوں کیلئے شادی مبارک اسکیم کو روبہ عمل لایا ہے۔ چیف منسٹر نے کہا کہ مشن بھاگیرتا کے ذریعہ گھر گھر پانی فراہم کیا جائے گا۔ چیف منسٹر نے کہا کہ سال 2022ء تک ریاست میں ایک کروڑ ایکڑ اراضیات کو قابل کاشت بنایا جائے گا۔ چیف منسٹر نے شہیدان تلنگانہ کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا کہ تلنگانہ کیلئے قربانیاں دینے والے شہیدان تلنگانہ کے افراد خاندان کو 10 لاکھ روپئے ایک فرد کو سرکاری ملازمت اور ڈبل بیڈ روم فراہم کرنے کے اقدامات کئے گئے۔ علاوہ ازیں ریاست کے غریب عوام کو باعزت زندگی گذارنے کیلئے حکومت نے مفت ڈبل بیڈروم فلیٹ کی اسکیم کا آغاز کیا جو ملک بھر میں ہی اپنی نوعیت کی منفرد اسکیم ثابت ہورہی ہے۔ گزشتہ سال 65 ہزار ڈبل بیڈروم فلیٹس تعمیر کئے گئے اور جاریہ سال شہر حیدرآباد میں ایک لاکھ اور دیہی علاقوں میں ایک لاکھ جملہ 2 لاکھ ڈبل بیڈروم فلیٹس تعمیر کروائے جائیں گے۔ کے سی آر نے برقی مسئلہ کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا کہ حکومت تلنگانہ نے عوام کو بلاوقفہ برقی سربراہی کا تہیہ کیا اور اس کے مطابق برقی خریدی کے ذریعہ عوام کو موثر برقی سربراہی کو یقینی بنایا جارہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ آئندہ تین سال کے دوران 24 ہزار میگاواٹ برقی پیداوار کا نشانہ رکھا گیا ہے۔ اس برقی پیداوار کے بعد ریاست میں برقی کٹوتی نہیں رہیگی ۔

 

کے سی آر نے ریاست میں شاہراہوں کو ترقی دینے کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا کہ گزشتہ سال 4500 کیلومیٹر طویل آر اینڈ بی شاہراہوں کو ترقی دی گئی اور اس سال مزید 7500 کیلومیٹر طویل شاہراہوں کے کام کئے جارہے ہیں اور 150 نئے بریجس کی مختلف مقامات پر تعمیر عمل میں لائی جارہی ہے۔ تلنگانہ حکومت نے مرکز پر دباؤ ڈالتے ہوئے دو سال کے دوران 1900 کیلومیٹر طویل قومی شاہراہوں کو منظور کروایا۔ علاوہ ازیں حیدرآباد کے اطراف آوٹر رنگ روڈ کی تعمیر مکمل کی جارہی ہے اور بھونگیر ۔ چوٹ اوپل ۔ ابراہیم پٹنم۔ شاد نگر۔ چیوڑلہ۔ شنکر پلی ۔ نرسا پور۔ توپران۔ گجویل ۔ جگدیوپور پر سے ایک اور ریجنل رنگ روڈ تعمیر کرنے کا حکومت منصوبہ رکھتی ہے۔ ریاست میں تعلیمی شعبہ کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا کہ حکومت ریاست میں تعلیم کے معیار کو بہتر بنانے اقدامات کررہی ہے اور نئے تعلیمی سال کے آغاز سے بشمول اقلیتوں کیلئے 70 اقامتی اسکولس جملہ 250 اقامتی اسکولس و کالجس قائم کئے جارہے ہیں۔ اس کے علاوہ ریاست میں عوام کو بہتر طبی سہولتوں کی فراہمی کیلئے سرکاری دواخانوں کی حالت میں بہتری پیدا کرنے اقدامات کئے جارہے ہیں۔ صنعتوں کا تذکرہ کرتے ہوئے چیف منسٹر نے کہا کہ 1798 صنعتیں قائم کی گئیں اور 24,698 کروڑ روپیوں کی سرمایہ کاری حاصل ہوئی۔ اسپیکر اسمبلی مسٹر مدھوسدن چاری، صدرنشین قانون ساز کونسل سوامی گوڑ، وزراء سرینواس یادو ، پدماراؤ، این نرسمہا ریڈی، لکشما ریڈی، اندرا کرن ریڈی، ارکان پارلیمان، اسمبلی و کونسل کے علاوہ چیف سیکریٹری ڈاکٹر راجیو شرما، ڈی جی پی انوراگ شرما اور دیگر عہدیدار موجود تھے۔ پریڈ میں شامل پولیس دستوں میں سی اے آر ہیڈکوارٹر کو انعام اول اور ستوپلی پولیس بٹالین کو دوسرا انعام دیا گیا۔چیف منسٹر نے اس موقع پر پولیس عہدیداروں میں میڈلس عطا کئے۔

 

تلنگانہ عوام کو یوم تاسیس کے موقع پر وزیر اعظم مودی کی مبارکباد
حیدرآباد 2 جون ( آئی این این ) وزیر اعظم نریندر مودی نے تلنگانہ کے عوام کو ریاست کے دوسرے یوم تاسیس کے موقع پر مبارکباد پیش کی ہے ۔ وزیر اعظم نے آندھرا پردیش کے عوام کو بھی مبارکباد دی ۔ مودی نے کہا کہ وہ دوسرے یوم تاسیس کے موقع پر تلنگانہ کے عوام کو مبارکباد دیتے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT