Wednesday , September 20 2017
Home / شہر کی خبریں / 9 عدد خادم الحجاج کے خلاف کارروائی کا فیصلہ مکہ مکرمہ اور مدینہ منورہ میں عازمین کی خدمات میں لاپرواہی کا شاخسانہ

9 عدد خادم الحجاج کے خلاف کارروائی کا فیصلہ مکہ مکرمہ اور مدینہ منورہ میں عازمین کی خدمات میں لاپرواہی کا شاخسانہ

حیدرآباد ۔ 4 ۔ نومبر ( سیاست نیوز) جاریہ سال حج کے موقع پر حجاج کرام کی خدمت پر مامور خادم الحجاج کے خلاف مختلف شکایتوں کا جائزہ لینے کے بعد تلنگانہ حج کمیٹی نے 9 خادم الحجاج کے خلاف کارروائی کا فیصلہ کیا ہے، ان میں تین کا تعلق تلنگانہ حج کمیٹی سے ہے۔ جاریہ سال جملہ 18 خادم الحجاج کو روانہ کیا گیا تھا جن میں تلنگانہ سے11 اور آندھراپردیش سے 7 حجاج شامل تھے۔ حج کمیٹی کے تین ملازمین کو خادم الحجاج کے طور پر روانہ کیا گیا تھا۔ حجاج کرام نے مکہ مکرمہ اور مدینہ منورہ میں قیام کے دوران کئی خادم الحجاج کی عدم کارکردگی کی شکایت کی ۔ حرم کے احاطہ میں پیش آئے کرین سانحہ اور منیٰ میں بھگدڑ کے سانحہ کے موقع پر کئی خادم الحجاج اپنے فرائض کی انجام دہی میں ناکام رہے۔ تلنگانہ حج کمیٹی نے دیگر محکمہ جات سے تعلق رکھنے والے 6 خادم الحجاج کے علاوہ حج کمیٹی کے تین ملازمین کے خلاف کارروائی کا فیصلہ کیا ہے اور انہیں وجہ نمائی نوٹس جاری کی گئی ہے۔ اسپیشل آفیسر حج کمیٹی پروفیسر ایس اے شکور نے بتایا کہ مختلف محکمہ جات سے تعلق رکھنے والے 6 خادم الحجاج کے بارے میں ان کے محکمہ جات کو رپورٹ روانہ کی گئی ہے اور انہیں ہمیشہ کیلئے بلیک لسٹ کیا جارہا ہے تاکہ وہ دوبارہ اس ذمہ داری کیلئے درخواست داخل نہ کر سکے۔ انہوں نے بتایا کہ حج کمیٹی کے ملازمین  کی جانب سے نوٹس کا جواب ملنے کے بعد ضروری کارروائی کی جائے گی۔

TOPPOPULARRECENT