Saturday , June 23 2018
Home / کھیل کی خبریں / ء 2011 ء ورلڈکپ کے ہیروز 2015 ء ورلڈکپ کی ممکنہ ٹیم سے باہر

ء 2011 ء ورلڈکپ کے ہیروز 2015 ء ورلڈکپ کی ممکنہ ٹیم سے باہر

ممبئی 4 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) 2011 ء ورلڈکپ میں ہندوستانی ٹیم کو عالمی چمپئن بنانے میں اہم رول ادا کرنے والے اور ٹورنمنٹ میں بہترین کھلاڑی کا اعزاز حاصل کرنے والے آل راؤنڈر یوراج سنگھ، جارحانہ اوپنر ویریندر سہواگ اور اِن کے دہلی کے ساتھی اوپنر گوتم گمبھیر، فاسٹ بولنگ کے کامیاب ترین کھلاڑی ظہیر خان اور اسپن شعبہ میں معروف نام ہربھجن

ممبئی 4 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) 2011 ء ورلڈکپ میں ہندوستانی ٹیم کو عالمی چمپئن بنانے میں اہم رول ادا کرنے والے اور ٹورنمنٹ میں بہترین کھلاڑی کا اعزاز حاصل کرنے والے آل راؤنڈر یوراج سنگھ، جارحانہ اوپنر ویریندر سہواگ اور اِن کے دہلی کے ساتھی اوپنر گوتم گمبھیر، فاسٹ بولنگ کے کامیاب ترین کھلاڑی ظہیر خان اور اسپن شعبہ میں معروف نام ہربھجن سنگھ کو آج آئندہ برس آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ میں منعقد شدنی ورلڈکپ 2015 ء کے ممکنہ 30 کھلاڑیوں کی فہرست میں شامل نہیں کیا گیا ہے۔ قومی سلیکشن کمیٹی کے اجلاس میں ہندوستانی 30 رکنی جس ٹیم کا اعلان کیا گیا ہے، اِس میں سینئرس کو نظرانداز کرتے ہوئے نوجوان کھلاڑیوں پر اعتماد کا اظہار کیا گیا ہے۔ 2011 ء ورلڈکپ میں ٹیم کو عالمی چمپئن بنانے والے مذکورہ کھلاڑیوں کو آج جب سلیکٹروں نے ممکنہ 30 کھلاڑیوں کی فہرست میں جب شامل نہیں کیا ہے تو اِن کھلاڑیوں کے کرئیر پر گہرا سوالیہ نشان لگ چکا ہے

کیونکہ اِن کھلاڑیوں میں بیشتر نام ایسے ہیں جنھوں نے گزشتہ ایک برس سے ہندوستانی ٹیم کی کسی بھی طرز کی کرکٹ میں نمائندگی نہیں کی ہے۔ مذکورہ پانچ اہم ناموں کے علاوہ 2011 ء ورلڈکپ میں ٹیم کی نمائندگی کرنے والے چند کھلاڑیوں کو بھی باہر کا راستہ دکھادیا گیا ہے جن میں آشیش نہرا، مناف پٹیل، اسپنر پیوش چاؤلہ اور آل راؤنڈر یوسف پٹھان شامل ہیں۔ بی سی سی آئی کے سکریٹری سنجے پٹیل نے یہاں سلیکشن کمیٹی کے اجلاس کے بعد ممکنہ کھلاڑیوں کی فہرست جاری کی ہے۔ جموں و کشمیر سے تعلق رکھنے والے آل راؤنڈر پرویز رسول، اترپردیش کے اسپنر کلدیپ یادو، بیٹسمین منیش پانڈے اور کیدر جئے دیو کو ممکنہ کھلاڑیوں کی فہرست میں شامل کیا گیا ہے کیونکہ اِن کھلاڑیوں کے گھریلو سطح پر کھیلی جانے والی کرکٹ میں مظاہرے متاثرکن ہے۔

سینئر کھلاڑیوں کو ممکنہ ٹیم میں شامل نہ کئے جانے کے علاوہ سلیکٹروں کی جانب سے کوئی دوسرا غیر متوقع فیصلہ نہیں کیا گیا ہے۔ جیسا کہ آل راؤنڈر اسٹیورٹ بنی اور اِن فارم بیٹسمین منوج تیواری کے ہمراہ وکٹ کیپر بیٹسمین سنجیو سامسن کو بھی ٹیم میں شامل کیا گیا ہے۔ آئی سی سی کی جانب سے جاری کردہ قواعد کے بموجب اِن 30 کھلاڑیوں میں سے قطعی طور پر 15 کھلاڑیوں کا انتخاب عمل میں آئے گا اور یہ کھلاڑی 14 فروری کو شروع ہونے والے ورلڈکپ میں ہندوستانی ٹیم کی نمائندگی کریں گے۔ ورلڈکپ 2011 ء سے ورلڈکپ 2015 ء کے درمیان یوراج سنگھ کا سفر سب سے زیادہ ڈرامائی رہا کیونکہ جس کھلاڑی نے 2011 ء ورلڈکپ میں غیرمعمولی مظاہروں کے ذریعہ سیریز کے بہترین کھلاڑی کا اعزاز حاصل کیا تھا وہ اب آسٹریلیا میں ہندوستانی ٹیم کی نمائندگی نہیں کرپائیں گے۔ ورلڈ کپس کے دوران یوراج سنگھ ناقص بیاٹنگ فارم کی وجہ سے پریشان ہونے کے علاوہ کینسر جیسی مہلک بیماری سے بھی پریشان رہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT