Friday , April 20 2018
Home / سیاسیات / آئندہ بجٹ : سب کو خوش کرنے کی کوشش کا امکان

آئندہ بجٹ : سب کو خوش کرنے کی کوشش کا امکان

۔8 ریاستوں کے اسمبلی انتخابات سے پہلے عوامی جذبات پیش نظر ، یکم فروری سے بجٹ کی پیشکشی
بجٹ 2018-19ء
نئی دہلی۔ 17جنوری (سیاست ڈاٹ کام) اگلے عام انتخابات سے پہلے 8 ریاستوں میں ہونے والے انتخابات کو دیکھتے ہوئے آئندہ یکم فروری کو پیش ہونے والے بجٹ کے مقبول عام ہونے کے پورے آثار ہیں۔بجٹ تیار کرنے میں مصروف وزیر خزانہ ارون جیٹلی اور مودی حکومت کو اپنے ہر پالیسی ساز فیصلے کے سیاسی نفع ونقصان کا مکمل اندازہ لگانا ہوگا۔ بجٹ کو اکثر سیاسی دستاویز کا نام دیاجاتا ہے ۔ یہ خصوصیت اس وقت اور بھی درست دکھائی دیتی ہے جبکہ ملک میں 2019ء کے عام انتخابات سے عین پہلے کم از کم 8 ریاستوں میں اسمبلی انتخابات ہونے جا رہے ہیں۔ایسے میں اس بات پر کوئی تعجب نہیں ہونا چاہئے کہ اس بار کا بجٹ اصلاح پسند کم اور جذبات کے مطابق زیادہ ہو۔حکومت نے منفی عوامی ردعمل ہونے کے اندیشوں کے باوجود نوٹ بندی اور گڈز اینڈ سروس ٹیکس (جی ایس ٹی) جیسی معیشت میں بنیادی تبدیلی لانے والے اقدامات کا خطرہ اٹھایا ہے ۔ ایسے میں مانا جا رہا ہے کہ اس بار کا بجٹ ج عوامی جذبات کے مطابق ہوگا، بجٹ میں تنخواہ دار طبقے کے لئے انکم ٹیکس میں راحت کی کچھ سوغات لا سکتے ہیں۔ وقت کی مانگ ہے کہ مڈل کلاس طبقے کے ہاتھ میں اور زیادہ پیسہ دیا جائے ۔ اس سے چیزوں اور خدمات کی خریداری بڑھے گی، جس سے بالآخر مانگ میں اور معیشت میں اضافہ ہو گا۔مڈل کلاس کو دی جانے والی مراعات انکم ٹیکس چھوٹ کی حد بڑھانے یا کچھ خاص بچت ذرائع میں سرمایہ کاری کی حد بڑھانے کے طور پر ہو سکتی ہیں۔

TOPPOPULARRECENT