Tuesday , August 14 2018
Home / شہر کی خبریں / آئندہ سال تلنگانہ کابینہ میں رد و بدل ‘نئے چہروں کی شمولیت کا امکان

آئندہ سال تلنگانہ کابینہ میں رد و بدل ‘نئے چہروں کی شمولیت کا امکان

تین وزرا کو کابینہ سے علیحدہ کیا جاسکتا ہے ۔ کونڈہ سریکھا کی شمولیت کی اطلاعات
حیدرآباد /24 نومبر ( سیاست نیوز ) تلنگانہ حکومت نے کابینہ میں نئے چہروں کو شامل کرنے کا منصوبہ بنایا ہے ۔ خاتون رکن اسمبلی کونڈہ سریکھا کو ردوبدل کے موقع پر کابینہ میں شامل کئے جانے کی اطلاع ہے ۔ چیف منسٹر چندر شیکھر راؤ نے موجودہ سیاسی صورتحال کا جائزہ لینے کے بعد آئندہ سال کم از کم تین وزرا کو برخواست کرکے نئے چہروں کو کابینہ میں شامل کرنے کا ارادہ کرلیا ہے ۔ گذشتہ چند دنوں سے وزیر قبائلی بہبود اجمیرا چندولال کی طبعیت ناساز ہے اور وہ اسمبلی کی سرگرمیوں میں شریک نہیں ہوپارہے ہیں ۔ اس وجہ سے ان کی جگہ کسی اور کو کابینہ میں شامل کیا جا سکتا ہے ۔ وزیر آبکاری پدما راؤ کے خلاف کئی شکایتیں منظر ہیں اور انہیں بھی کابینہ سے علیحدہ کیا جاسکتا ہے ۔ اسی طرح ضلع ورنگل سے تعلق رکھنے والے 9 ایم پی ٹی سی ارکان نے اچانک ٹی آر ایس سے استعفی دے دیا اور بذریعہ فیاکس مکتوب استعفی روانہ کردیا ۔ جیسے ہی ان کے استعفی کی اطلاع مقامی افراد کو ملی پارٹی میں ہلچل مچ گئی اور مقامی ٹی آر ایس کارکن بالخصوص پارٹی صدر نے آج ایک اجلاس منعقد کرکے انہیں استعفی واپس لینے پر زور دیا ۔ تاہم مذکورہ ارکان اپنے استعفی واپس لینے سے انکار کرتے ہوئے اپنے فیصلوں پر اٹل ہیں ۔ ڈپٹی چیف منسٹر کڈیم سری ہری کو اس بات کی اطلاع ملنے پر انہوں نے چیف منسٹر کے علم میں یہ بات لائی جس پر چیف منسٹر نے اس واقعہ پر ناراضگی کا اظہار کیا ۔ ان کے قریبی ذرائع کے مطابق اس مرتبہ ضلع ورنگل کو کافی اہمیت دیتے ہوئے سابقہ وزیر و رکن اسمبلی ٹی آر ایس کنڈہ سریکھا کو اس بار کابینہ میں شامل کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT