Monday , June 18 2018
Home / ہندوستان / آئینی حق کا استعمال کرتے ہوئے ووٹ ضرور ڈالیں

آئینی حق کا استعمال کرتے ہوئے ووٹ ضرور ڈالیں

نئی دہلی۔/6فبروری، ( فیکس ) شاہی امام مسجد فتحپوری دہلی مولانامفتی محمد مکرم احمد نے آج نماز جمعہ سے قبل خطاب میں کہا کہ بلا شبہ مذہب اسلام ایک سچا اور مکمل دین ہے جس کی تعلیمات ہی اس بات کی گواہ ہیں کہ اس میںانسانی حقوق اور بندگی کے تمام فرائض کی حفاظت کی گئی ہے۔مذہب اسلام میں ترک دنیا اور رہبانیت نہیں ہے۔ انہوں نے مسلمانوں سے اپیل ک

نئی دہلی۔/6فبروری، ( فیکس ) شاہی امام مسجد فتحپوری دہلی مولانامفتی محمد مکرم احمد نے آج نماز جمعہ سے قبل خطاب میں کہا کہ بلا شبہ مذہب اسلام ایک سچا اور مکمل دین ہے جس کی تعلیمات ہی اس بات کی گواہ ہیں کہ اس میںانسانی حقوق اور بندگی کے تمام فرائض کی حفاظت کی گئی ہے۔مذہب اسلام میں ترک دنیا اور رہبانیت نہیں ہے۔ انہوں نے مسلمانوں سے اپیل کی کہ وہ دینی ، ملی اور سماجی میدانوں میں نمایاں خدمات انجام دیں۔ دہلی کے الیکشن کے بارے میں انہوں نے کہا کہ 7فبروری کو دہلی اسمبلی کے لئے الیکشن ہورہا ہے اور یہ جمہوریت کی دین ہے کہ ہر پانچ سال میں رائے دہندے کو اپنی پسند کی حکومت کا انتخاب کرنے کا موقع ملتا ہے۔

یہ ہمارا آئینی حق ہے لہذا مسلمانوں اور تمام شہریوں سے اپیل ہے کہ کل ہونے والے دہلی کے الیکشن میں ضرور حصہ لیں اور اپنا ووٹ ضرور ڈالیں، سبھی ووٹر اپنے حق کو بے کار اور ضائع نہ کریں کیونکہ اکثر دیکھا گیا ہے کہ مسلم علاقوں میں ووٹ کاٹ دیئے جاتے ہیں اور ایسا بھی دیکھنے میں آیا ہے کہ مسلم ووٹروں کے ووٹ سازش کرکے پہلے ہی ڈال دیئے جاتے ہیں اور اصل لوگوں کو اس کا علم ہی نہیں ہوتا۔ لہذا پچھلے تجربات سے فائدہ اٹھاتے ہوئے ووٹ ڈالنے میں کوئی غفلت نہ کی جائے۔ انہوں نے کہا کہ وہ امیدوار جو خدمت کا جذبہ رکھتے ہوں اور ملک کے امن و سلامتی کے فروغ میں نیز بدعنوانی اور مہنگائی کو کنٹرول کرنے اور عوام کی سب ضرورتوں کو پورا کرنے میں مخلص نظر آئیں تو ایسے ہی امیدواروں کو کامیاب بنانا چاہیئے۔ یہ الیکشن خدمات کی بنیاد پر ہونا چاہیئے۔ آج ملک فرقہ پرستی اور مذہبی عدم روادری کے فتنے سے دوچار ہے۔

ہندوستان کے پچھلے مہینہ کے دورے پر بھی امریکہ کے صدر براک اوباما نے ہندوستان میں فرقہ پرستی کے فروغ پر تشویش کا اظہار کیا تھا اور کل کے واشنگٹن میں دیئے گئے بیان میں بھی انہوں نے ہندوستان میں مذہبی عدم رواداری کے بڑھتے رجحان پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔ لہذا اگر ہندوستان بین الاقوامی عزت چاہتا ہے تو اسے فرقہ پرست عناصر کو لگام دینی ہوگی۔ انہوں نے راجستھان اورگجرات میں اسکولوں میں آر ایس ایس کے گیتوں کو شامل کئے جانے کی مذمت کی۔ شاہی امام نے کہا کہ دہلی ہندوستان کی راجدھانی ہے یہاں پر اگر اقلیتوں کو نشانہ بنایا جائے اور ان کی عبادت گاہوں پر حملے کئے جائیں تو اسے بری بات اور کیا ہوسکتی ہے ان کی شدید مذمت ہونی چاہیئے۔ ہم ان حرکتوں کی شدید مذمت کرتے ہیں اور حکومت سے پرزور مطالبہ کرتے ہیں کہ چرچ پر حملے کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے تاکہ آئندہ چرچ پر حملہ کی ہمت نہ ہو۔ اقلیتوں کے جان و مال اور مذہبی عبادت گاہوں کا تحفظ ہونا چاہیئے ورنہ ملک کی ترقی اور خوشحالی کا سفر مشکل ہوجائے گا۔

TOPPOPULARRECENT