Friday , November 17 2017
Home / دنیا / آئی ایس کا شبہ ، مسلم بھائی بہنیں طیارہ چھوڑنے پر مجبور

آئی ایس کا شبہ ، مسلم بھائی بہنیں طیارہ چھوڑنے پر مجبور

لندن ۔ 24اگست (سیاست ڈاٹ کام) تین ہندوستانی نژاد مسلم بھائی بہنوں جن میں دو حجاب والی لڑکیاں شامل ہیں، ان کا دعویٰ ہیکہ انہیں یہاں ایک ایرپورٹ پر طیارہ سے اتار دیا گیا اور ٹارمک پر برطانوی پولیس والوں نے ان سے پوچھ تاچھ کی کیونکہ ایک مسافر نے انہیں آئی ایس آئی ایس کے حامی ہونے کا موردالزام ٹھہرایا تھا۔ 24 سالہ سکینہ دھراس، 19 سالہ مریم دھراس اور 21 سالہ علی دھراس نے اسٹانسٹیڈ سے گذشتہ ہفتہ اطالوی شہر ناپلس کیلئے ایزی جیٹ فلائیٹ میں سوار ہوئے تھے۔ ایک رکن عملہ ان سے رجوع ہوا اور انہیں کچھ وضاحت کئے بغیر طیارہ سے اترجانے کیلئے کہا۔ میڈیا کی رپورٹس کے مطابق یہ تینوں کا تعلق شمال مغربی لندن سے ہے۔ انہیں طیارہ سے اتار کر آفیسرس نے ایک گھنٹہ پوچھ تاچھ کی اور سب سے پہلے پوچھا کہ کیا تم انگریزی بولتے ہو۔ سکینہ نے ’دی انڈی پنڈنٹ‘ اور ’فیس بک‘پر اپنی تحریر میں اس واقعہ کی تفصیل بیان کی ہے۔ سکینہ کے مطابق ایک آفیسر نے ان سے کہا کہ آپ کی فلائٹ پر ایک مسافر نے دعویٰ کیا کہ آپ تینوں آئی ایس آئی ایس کے ممبرس ہو۔مسافروں نے عربی تحریر دیکھی اور آپ کے فون پر اللہ کی تعریف کے کلمات دیکھے اور اس کی شکایت پر آپ تینوں کو طیارہ سے اتارنا پڑا۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT