Wednesday , January 17 2018
Home / Top Stories / آئی اے ایس افسر کی پراسرار موت کیخلاف احتجاج

آئی اے ایس افسر کی پراسرار موت کیخلاف احتجاج

بنگلور ۔ 18 ۔ مارچ (سیاست ڈاٹ کام) ایک جواں سال فرِض شناس آئی اے ایس افسر کی پراسرار موت کے خلاف عوامی غم و غصہ میں اضافہ ہورہا ہے ۔ اس کے خاندان نے بھی اس کی خودکشی کو تسلیم کرنے سے انکار کردیا ہے اور شبہ ظاہر کیا کہ اس کا قتل کیا گیا ہے ۔ خاندان نے اس پراسرار موت کی سی بی آئی تحقیقات کرنے کا مطالبہ کیا ہے ۔ اس مسئلہ پر کرناٹک قانون ساز اس

بنگلور ۔ 18 ۔ مارچ (سیاست ڈاٹ کام) ایک جواں سال فرِض شناس آئی اے ایس افسر کی پراسرار موت کے خلاف عوامی غم و غصہ میں اضافہ ہورہا ہے ۔ اس کے خاندان نے بھی اس کی خودکشی کو تسلیم کرنے سے انکار کردیا ہے اور شبہ ظاہر کیا کہ اس کا قتل کیا گیا ہے ۔ خاندان نے اس پراسرار موت کی سی بی آئی تحقیقات کرنے کا مطالبہ کیا ہے ۔ اس مسئلہ پر کرناٹک قانون ساز اسمبلی میں اپوزیشن جماعتوں نے لگاتار دوسرے دن آج بھی ایوان کی کارروائی کو روک دیا ۔ آئی اے ایس افسر ڈی کے روی کی اچانک پراسرار موت پر جذبات مشتعل ہورہے ہیں۔ اس دوران کے ارکان خاندان نے اچانک قدم اٹھاتے ہوئے ودھان سودھا (اسمبلی) سکریٹریٹ کے روبرو دھرنا منظم کیا اور سی بی آئی تحقیقات کا مطالبہ قبول نہ کئے جانے پر خودکشی کی دھمکی دی لیکن حکومت نے اس ضمن میں اپوزیشن کا مطالبہ قبول کرنے سے انکار کر دیا ۔ متوفی روی کے والد کریپا ، والدہ گورماں اور بھائی رمیش نے اسمبلی کے روبرو دھرنے کے دوران یہ دھمکی دی ۔ اس نئی صورتحال کے درمیان ریاستی انتظامیہ ایک نئے دباؤ کا شکار ہوگیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT