Tuesday , December 11 2018

آدھار سے وابستہ انتخابی نظام سے متعلق عرضی پر چار ہفتے کے بعد سماعت

نئی دہلی،19فروری (سیاست ڈاٹ کام) سپریم کورٹ بے نامی لین دین اور فرضی پولنگ روکنے کے لئے ‘آدھار’ نظام اپنا نے سے متعلق عرضی پر چار ہفتہ بعد سماعت کرے گی۔عرضی گزار بھارتیہ جنتا پارٹی کے لیڈر اشونی اپادھیائے نے الیکشن میں فرضی پولنگ روکنے اور زیادہ سے زیادہ را ئے دہندگان کی شراکت داری یقینی کرنے کے لئے پولنگ نظام کو آدھار سے جوڑنے کی ہدایت دینے کی عدالت سے درخواست کی۔مسٹر اپادھیائے نے اپنی عرضی میں کہا کہ منقولہ اور غیرمنقولہ املاک کو آدھار سے جوڑکر بے نامی لین دین پر لگام لگائی جاسکتی ہے ۔عرضی گزار کی طرف سے سینئر وکیل وکاس سنگھ نے چیف جسٹس دیپک مشرا کی صدارت والی بنچ کے سامنے معاملہ کا خصوصی ذکر کیا۔ جسٹس مشرا نے کہاکہ ہم اس معاملہ کی سماعت چار ہفتہ بعد کریں گے ۔مسٹر سنگھ نے حالانکہ عدالت سے مرکز کو فی الحال نوٹس جاری کرنے کی درخواست کی لیکن اس نے اس سے انکار کردیا

TOPPOPULARRECENT