Thursday , December 13 2018

آدھار معاملہ کی دستوری بنچ میں آج سماعت

نئی دہلی، 13 دسمبر ( سیاست ڈاٹ کام) سپریم کورٹ کی پانچ رکنی دستوری بنچ آدھار کی لازمیت کے معاملہ میں عبوری راحت کی درخواست پر کل دوپہر 2بجے سماعت کرے گی۔عرضی گذاروں شانتا سنہا اور کلیانی مینن کی جانب سے ایڈوکیٹ آن ریکارڈ (اے اوآر) نے چیف جسٹس دیپک مشرا، جسٹس اے ایم کھانولکر اور جسٹس ڈی وائی چندرچوڑ کی بنچ کے سامنے کیس کاخاص طور سے ذکر کیا۔جسٹس مشرا نے کہا کہ اس معاملہ کی سماعت کل 2بجے کی جائے گی۔ گذشتہ 7 دسمبر کو چیف جسٹس نے درخواست گزاروں کے وکیل کو یقین دلایا تھا کہ وہ اس ہفتے آئینی بنچ قائم کر دیں گے۔ قابل غور ہے کہ گذشتہ 7 دسمبر کو معاملہ کے خصوصی ذکر کے دوران اٹارنی جنرل کے کے وینو گوپال نے عدالت کو آگاہ کیا تھا کہ مرکزی حکومت آدھار لنکنگ کی آخری تاریخ 31دسمبر 2017سے بڑھا کر 31مارچ 2018کرے گی۔ اٹارنی جنرل نے واضح کیا تھا کہ موبائل نمبر کو آدھار سے جوڑنے کی آخری تاریخ 6 فروری 2018سے آگے نہیں بڑھائی گئی۔ کل چیف جسٹس کی سربراہی میں پانچ رکنی آئینی بنچ پارسی خواتین کی شناخت سے جڑے معاملے کی سماعت کرے گی اور ایسی امید کی جا رہی ہے کہ یہی بنچ آدھار معاملہ کی بھی سماعت کرے گی۔

TOPPOPULARRECENT