Monday , June 18 2018
Home / ہندوستان / آدھار کو بدنام کرنے کی منظم سازش : نیل کائنی

آدھار کو بدنام کرنے کی منظم سازش : نیل کائنی

ایرٹیل کو آدھار کی جانچ کیلئے ختم مارچ تک مہلت ‘ یو آئی ڈی اے آئی کا اقدام
بنگلورو۔11جنوری ( سیاست ڈاٹ کام ) سابق منفرد شناختی اتھاریٹی آف انڈیا ( یو آئی ڈی اے آئی ) کے صدرنشین نندن نیل کائینی نے کہا کہ ’’ آدھار کو بدنام کرنے کی منظم سازش کی جارہی ہے ‘‘ وہ روزنامہ ’’ ٹریبیون ‘‘ کی آدھار کے معلوماتی ذخیرے کی افشاء کے بارے میں ایک خبر پر ایف آئی آر کے اندراج پر ردعمل ظاہر کررہے تھے ۔ انہوں نے کہا کہ آدھار کو بدنام کرنے کی یہ سوفیصد منظم سازش ہے ۔ انہوں نے اے ٹی نیوز کو انفوسیس سائنٹیفک فاؤنڈیشن ایوارڈ تقریب کے دوران علحدہ طور پر کہا کہ دہلی پولیس نے پیر کے دن یو آئی ڈے اے آئی کے ایک ملازم کی شکایت پر ایف آئی آر درج کرلی ہے جو روزنامہ کی خبر کے بعد کیا گیا ہے جس میں ایک ارب آدھار کارڈز کی معلومات کا افشاء کرنے کا الزام عائد کیا ہے ۔ انہوں نے اس صحافی کا نام بھی بتایا جو اس خبر کے پس پردہ ہے ۔ پولیس نے نامہ نگار کے خلاف ایک ایف آئی آر درج کرلی ہے جو اپنے آپ کو ایک خریدار کے طور پر پیش کرتے ہوئے اخبار کا ایک نسخہ خرید رہا تھا ۔ نامعلوم فروخت کرنے والے اخبار نے واٹس اپ پر بتایا کہ آدھار نمبروں کی تفصیلات تک بلارکاوٹ رسائی حاصل ہے ۔ نیل کائینی نے کہا کہ اس مسئلہ کو حقیقت سے زیادہ بڑا چڑھاکر پیش کیا جارہا ہے ۔آدھار کارڈ کی حفاظت کئی مرحلوں پر مشتمل ہے اور من مانے اس تک رسائی ناممکن ہے ۔ نئی دہلی سے موصولہ اطلاع کے بموجب یو آئی ڈی اے آئی نے عارضی طور پر بھارتی ایرٹیل کو اجازت کی مہلت میں اضافہ کردیا ہے جس کے تحت حیاتیاتی تشخص کی دوبارہ جانچ اُس کے موبائیل صارفین سے 31مارچ تک حاصل کی جاسکتی ہے ۔ گذشتہ ماہ اس نے از سرنو جانچ کیلئے 10جنوری کی تاریخ مقرر کی جب کہ ایل پی جی سبسیڈی کیلئے بینک کھاتوں میں 138 کروڑ ایل پی جی صارفین باقی تھے ‘ توسیع کردی تھی ۔

TOPPOPULARRECENT