Monday , December 18 2017
Home / اضلاع کی خبریں / آرمور مسلم شادی خانے کیلئے ایک کروڑ روپئے منطور

آرمور مسلم شادی خانے کیلئے ایک کروڑ روپئے منطور

آرمور /10 نومبر ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) نائب وزیر اعلی تلنگانہ محمود علی ٹھیک 12.30 بجے آرمور پہونچے یہاں پر رکن اسمبلی آرمور میونسپل چیرپرسن اور مسلم کمیٹیوں کے ذمہ داران ان کا والہانہ استقبال کیا اور ان کی کثرت سے شالپوشی و گلپوشی کی گئی ۔ اس موقع پر آرمور سب رجسٹرار دفتر کا افتتاح کیا ۔ اس وقت ان کے ہمراہ ممبر آف پاولیرمنٹ کے کویتا موجود تھیں ۔ اس کے بعد یہاں پر جلسہ عام سے خطاب کریت ہوئے بتایا کہ تلنگاہن کو وزیر اعلی کے سی آر سنہرا تلنگانہ بنانا چاہتے ہیں ۔ کے سی آر نے مسلمانوں کیلئے شادی مبارک اسکیم کا نفاذ عمل میں لایا تاکہ عنقریب مسلم لڑکیوں کے شادیوں میں آسانی ہو اور حال ہی میں مسلمانوں کیلئے 60 اقامتی اسکولس کی منظوری گذشتہ 57 برسوں میں آندھرائی قائدین نے تلنگانہ کو انتہائیت پستی کی طرف لے جاکر چھوڑا تلنگانہ کو لوٹ لیا گیا لیکن کے سی آر کی 14 سالہ جدوجہد اور جان کی پرواہ کئے بغیر اس کا زہر جمع رہے تب جاکر تلنگانہ علحدہ ہوا بتایا کے تلنگانہ کو سنہرا تلنگانہ بنانے کیلئے ہمیں صبر تحمل سے کام لینا ہوگا جب جاکر عوام کے ہر مسائل کا حل نکلے گا رکن اسمبلی کیلئے ہمیں صبر تحمل سے کام لینا ہوگا جب جاکر عوام کے ہر مسائل کا حل نکلے گا رکن اسمبلی آرمور جیون ریڈی ، میونسپل چیرمین سواتی سنگھ ببلو مختلف مذہبی تنظیموں کی نمائندگیوں پر نائب وزیر اعلی نے آرمور مسلم شادی خانے کیلئے ایک کرؤر روپئے کی منظوری کا اعلان کیا اور 3 ایکر اراضی کیلئے ضلع کلکٹر یوگیتا رانا کو احکامات جاری کئے تاکہ ماڈل شادی خانہ تیار ہو ۔ اس کے علاوہ آرمور کیلئے اقامتی اسکول کی منظوری کا اعلان کے علاوہ آرمور ریونیو ڈیویژن کیلئے اندرون ایک ہفتہ احکامات جاری کرنے کا تیقن دیا اور مختلف قبرستان اور عیدگاہوں کیلئے دھمکی منطوری کا بھی اعلان کیا ۔ انہوں نے کہا کہ ریاستی حکومت نے فیصلہ کیا ہے کہ اس سال مسلم اقامتی اسکولس اردو میڈیم کیلئے 60 اسکولس کو منطوری دی گئی وہ آئندہ جون سے قائم کردئے جائیں گے ۔ اس طرح ہر سال مسلم اقامتی اسکولس کا قیام عمل میں لایا جائے گا ۔ انہوں نے بتایا کہ گذشتہ حکومتوں کے دوران عرف 6 مسلم اقامتی اسکولس ہیں ۔ یہ 57 سالہ حکومت کا ریکارڈ ہے لیکن ہم نے اندرون دو سال کی مدت 60 اقامتی اسکول قائم کئے ۔ اس پروگرام سے رکن پارلیمنٹ کے کویتا نے خطاب کرتے ہوئے بتایا کہ مسلم ماوں بہنیوں کو فکر کرنے کی ضرورت نہیں ۔ تمام بے گھر افراد کو مکان دیا جائے گا ۔ حکومت اس سال 400 مکان ہر حلقہ اسمبلی کو دے رہی ہے ۔ آنے والے تین سالوں میں تمام کو ذاتی مکان ہوگا ۔ رکن اسمبلی نے مخاطب کرتے ہوئے نائب وزیر اعلی کے سامنے فنڈس کی منظوری کیلئے درخواست کی ۔ اس کے بعد محمود علی رکن پارلیمنٹ وغیرہ نے آرمور کے موضع انکاپور میں حکومت کی جانب سے بنائے جانے والے 165 ڈبل بیڈرومس کے مکانات کا سنگ بنیاد رکھا ۔ اس موقع پر پرنسپل سکریٹری اسٹامپ و رجسٹریشن مقامی میونسپل چیرمین سواتی سنگھ ببلو ، مختلف سیاسی قائدین مسلم کمیٹیوں کے ذمہ داران اور سیاسی سماجی مذہبی قائدین کے علاوہ مسلم خواتین کی کثیر تعداد موجود تھی ۔

TOPPOPULARRECENT