Sunday , December 17 2017
Home / شہر کی خبریں / آر ایس ایس کا داعش سے تقابل غیر مناسب

آر ایس ایس کا داعش سے تقابل غیر مناسب

ہندوستان میں انتہا پسندانہ نظریات کو مسترد کیا جائیگا:آر ایس ایس لیڈر
حیدرآباد۔/4نومبر، ( پی ٹی آئی) آر ایس ایس کے سینئر کارکن نے آج کہا کہ ہندوستان میں کسی بھی انتہا پسندی کے نظریہ کو مسترد کیا جائے گا۔ راشٹریہ سیویم سیوک سنگھ ( آر ایس ایس ) کا دہشت گرد تنظیم دولت اسلامیہ ( داعش ) سے تقابل غیر مناسب ہے۔ اگر آپ کہتے ہیں کہ داعش کی ذہنیت اور آر ایس ایس کی ذہنیت میں یکسانیت پائی جاتی ہے تو ہمارا اس جمہوری ملک میں وجود ہی نہیں ہوتا۔ ہندوستان ایک ایسا ملک ہے جہاں انتہا پسندی کے نظریہ کو مسترد کردیا جائے گا۔ آر ایس ایس کے تلنگانہ اسٹیٹ سکریٹری چندر شیکھر نے اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ ہندوستان میں انتہا پسندی کے نظریہ کو ہرگز بقاء حاصل نہیں ہوگی۔ ہندوستان میں نکسلزم قائم نہیں رہ سکا کیونکہ نکسلزم اصل دھارے کے نظریہ سے ہٹ کر تھا۔ انہوں نے کہا کہ آر ایس ایس ہندوستان کے اقدار جیسے ساری دنیا ایک کنبہ ہے پر ایقان رکھتے ہوئے آگے بڑھ رہی ہے۔ آر ایس ایس کو کثرت میں وحدت پر یقین ہے۔ آر ایس ایس کا داعش سے تقابل کرنا غیر منصفانہ کیونکہ داعش ہزاروں افراد کی ہلاکت کی ذمہ دار ہے  اور وہ یہاں ایک تقریب کے بعد اخباری نمائندوں سے بات کررہے تھے۔ انہوں نے عدم رواداری کے مسئلہ پر مصنفین کی جانب سے ایوارڈس کی واپسی کے بارے میں کہا کہ بعض دانشوروں نے مل کر یہ منصوبہ بنایا ہے۔ ان کی یہ حرکتیں  اس ملک کے وقار نقصان پہنچاسکتی ہیں۔ وہ ساری دنیا کو ایک غلط پیام دینا چاہتے ہیں کہ اس ملک میں ایسا کچھ خراب ہورہا ہے جو ان کے لئے ٹھیک نہیں ہے۔ دانشوروں کے لئے مناسب نہیں ہے کہ وہ ہمارے بین الاقوامی معیار اور قد کو گھٹائیں اور عدم رواداری کے نام پر ملک کو بدنام کیا جائے۔

TOPPOPULARRECENT