Sunday , January 21 2018
Home / سیاسیات / آر جے ڈی کے بھوک ہڑتال کرنے والے لیڈر کی 15 اگست کو خودکشی کی دھمکی

آر جے ڈی کے بھوک ہڑتال کرنے والے لیڈر کی 15 اگست کو خودکشی کی دھمکی

پٹنہ ۔ 13 ۔ اگست (سیاست ڈاٹ کام) آر جے ڈی ایم ایل اے دنیش کمار سنگھ جو گزشتہ تین روز سے بھوک ہڑتال پر ہیں، نے آج انتباہ دیا کہ اگر ریاست بہار کو خشک سالی سے متاثرہ ریاست قرار نہیں دیا گیا تو وہ خود سوزی کرلیں گے ۔ خشک سالی سے متاثرہ کسانوں کو شدید مسائل کا سامنا ہے ۔ میڈیا سے بات کرتے ہوئے مسٹر سنگھ نے کہا کہ اگر کل تک ریاست بہار کو خشک سال

پٹنہ ۔ 13 ۔ اگست (سیاست ڈاٹ کام) آر جے ڈی ایم ایل اے دنیش کمار سنگھ جو گزشتہ تین روز سے بھوک ہڑتال پر ہیں، نے آج انتباہ دیا کہ اگر ریاست بہار کو خشک سالی سے متاثرہ ریاست قرار نہیں دیا گیا تو وہ خود سوزی کرلیں گے ۔ خشک سالی سے متاثرہ کسانوں کو شدید مسائل کا سامنا ہے ۔ میڈیا سے بات کرتے ہوئے مسٹر سنگھ نے کہا کہ اگر کل تک ریاست بہار کو خشک سالی سے متاثرہ ریاست قرار نہیں دیا گیاتو وہ 15 اگست کو خودسوزی کرلیں گے ۔انہوں نے کہا کہ وہ کسانوں کے حقوق کیلئے لڑ رہے ہیں جو ناکافی بارش کی وجہ سے مسائل کا شکار ہیں اور جاریہ سال دھان کی فصل کی بوائی نہیں کرسکے لیکن ریاستی حکومت کو ان کے مسائل کی کوئی پرواہ نہیں ہے ۔

یاد رہے کہ مسٹر سنگھ بہار کے ضلع بھوجپور کے جگدیش پور حلقہ اسمبلی کے ایم ایل اے ہیں۔ اپنے مطالبہ کی تکمیل کیلئے وہ پیر کے روز سے بھوک ہڑتال پر ہی جبکہ پولیس نے انہیں جبراً پٹنہ میڈیکل کالج اینڈ ہاسپٹل میں شریک کروایا ہے ۔ انہوں نے وزیر اعلیٰ کی سرکاری رہائش گاہ کے روبرو بھوک ہڑتال کا آغاز کیا تھا لیکن پولیس کے جبر کے باوجود وہ ا پنی بھوک ہڑتال ختم کرنے تیار نہیں ہیں ۔ یہاں اس بات کا تذکرہ ضروری ہے کہ ریاست بہار کی معیشت زراعت پر منحصر ہے لیکن ریاستی حکومت آبپاشی سے متعلق بالکل بے پرواہ ہے ۔ آج کسان زار و قطار رو رہے ہیں کیونکہ ان کے ارکان خاندان کو فاقہ کشی کرنی پڑ رہی ہے ۔ انہوں نے حکومت پر الزام عائد کیا کہ حکومت یہ بات اچھی طرح جانتی ہے کہ ریاست بحرانی کیفیت سے دوچار ہے

لیکن اس کی یکسوئی کیلئے کوئی سنجیدہ اقدامات نہیں کئے جارہے ہیں۔ جب کھیتوں کی آبپاشی کیلئے پانی نہیں ہوگا تو فصلیں کیسے تیار ہوں گی ؟ انہوں نے ادعا کیا کہ کئی ٹیوب ویل اور بورویل ناکارہ ہوچکے ہیں ۔ اگر ان کی بروقت درستگی کی جاتی تو کسانوں کو مسائل سے دوچار ہونا نہیں پڑتا لیکن ایسا نہیں ہوا جس سے حکومت کی نااہلی اور نا عاقبت اندیشی ظاہر ہوتی ہے ۔ اب حالات ایسے ہوگئے ہیں کہ اگر موسلادھار بارش بھی ہوئی تو کسان کھیتوں کی بوائی نہیں کرسکیں گے ۔ حیرت انگیز بات یہ ہے کہ ہاسپٹل میں ہونے کے باوجود مسٹر سنگھ کی عیادت کیلئے کوئی سیاسی لیڈر وہاں نہیں پہنچا جس پر مسٹر سنگھ نے کہا کہ یہ ان کی زندگی ہے اور انہوں نے اپنی زندگی کو کسانوں کیلئے وقف کردیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT