Monday , January 22 2018
Home / کھیل کی خبریں / آر سی بی اور کے کے آر کے مابین آج سنسنی خیز مقابلہ متوقع

آر سی بی اور کے کے آر کے مابین آج سنسنی خیز مقابلہ متوقع

کولکتہ ۔ 10 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) آئی پی ایل کرکٹ کے ایک میچ میں دفاعی چمپیئنس کولکتہ نائیٹ رائیڈرس (کے کے آر) کا مقابلہ آج رائیل چیلنجرس بنگلور (آر سی بی) سے ہوگا۔ آر سی بی اگرچہ بینک کے معاملہ میں بہترین کرکٹ اسٹارس کی حامل ہے، اس کے باوجود کل کے مقابلہ میں وہ دفاعی چمپیئن کے مقابلہ میں زبردست دباؤ کا سامنا کرے گی۔ 2014ء کے سیزن میں 14 میچ

کولکتہ ۔ 10 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) آئی پی ایل کرکٹ کے ایک میچ میں دفاعی چمپیئنس کولکتہ نائیٹ رائیڈرس (کے کے آر) کا مقابلہ آج رائیل چیلنجرس بنگلور (آر سی بی) سے ہوگا۔ آر سی بی اگرچہ بینک کے معاملہ میں بہترین کرکٹ اسٹارس کی حامل ہے، اس کے باوجود کل کے مقابلہ میں وہ دفاعی چمپیئن کے مقابلہ میں زبردست دباؤ کا سامنا کرے گی۔ 2014ء کے سیزن میں 14 میچوں میں کامیابی اور گذشتہ تین سیزنس کے دوران دو مرتبہ ٹائیٹل جیتنے والی گوتم گمبھیر کے زیرقیادت کے کے آر نے ناقابل تسخیر ٹیم کا مقام بنا لیا ہے۔ ویراٹ کوہلی کی قیادت میں آر سی بی کے پاس اگرچہ دورحاضر کے مطابق بہترین بیاٹنگ آرڈر ہے جن میں اے بی ڈی ویلیرس بھی شامل ہیں۔ اس کے برخلاف اے بی کے کے آر کے پاس ایسے بیٹسمین نہیں ہیں۔ ان کے کھلاڑی ایک دوسرے کا کچھ اس ذمہ دارانہ انداز میں ساتھ نبھائے ہیں کہ اس میں کوئی کمی نظر نہیں آئی۔ ممبئی انڈینس کے خلاف 8 اپریل کو اختتامی میچ میں جنوبی افریقہ کے پیسر مورنی مرکل (2/18) نے اچھی شروعات کی تھی۔ بعدازاں گوتم گمبھیر (57)، منیش پانڈے (40) اور سوریہ کمار یادو (46) نے خاطرخواہ رن دیتے ہوئے اپنی ٹیم کو 7 وکٹ سے کامیابی دلائی

جبکہ کھیل کے اختتام کیلئے 9 گیند باقی تھے۔ یادو نے کامیابی کیلئے 169 کے ہدف کا تعاقب کرتے ہوئے شدید دباؤ کے باوجود 20 گیندوں کا سامنا کرتے ہوئے شاندار چھکے لگایا اوریہ ثابت کردیا کہ وہ کس حد تک خطرناک ثابت ہوسکتے ہیں۔ کے کے آر کے ان بیٹسمین کا غلبہ کچھ اس طرح رہا کہ اس کے مقابلہ روہت شرما کے ناٹ آؤٹ 98 رن اور آل راونڈر کوری اینڈرسن کے ناٹ آوٹ 55 رن بھی ماند پڑ گئے۔ ویراٹ کوہلی اس بیٹنگ آرڈر کے باوجود کے کے آر کو اس کے ہوم گراونڈ پر کامیابی سے محروم رکھنے کیلئے ممکنہ جدوجہد کرسکتے ہیں کیونکہ کپتان کوہلی ہی دورحاضر کے کرکٹ کے ماہر ہیں اورجارحانہ کھیل کیلئے شہرت رکھتے ہیں جن کے ساتھ اے بی ڈی ویلیرس کے علاوہ کیریبیائی کرس گیل بھی ہیں۔ ان تینوں کا کھیل اگرچہ قابل دید ہوگا لیکن ان تمام بڑے کھلاڑیوں کی موجودگی کے باوجود اپنی بہترین کوششوں کا استعمال کرتے ہوئے بھی 2009ء اور 2011ء کے ٹورنمنٹس میں رنراپ کے مقام پر اکتفا کرسکتے۔ آر سی بی اس سیزن میں بھی ٹائیٹل کیلئے ایک امکانی اور پسندیدہ ٹیم سمجھی جارہی ہے لیکن یہ دیکھنا باقی ہے کہ آیا ہندوستانی کرکٹ ٹیم کے مستقبل کے کپتان سمجھے جانے والے کوہلی آیا پھر ایک مرتبہ اپنی ٹیم کو شاندار فتح سے ہمکنار کرسکیں گے۔

TOPPOPULARRECENT