Sunday , December 17 2017
Home / شہر کی خبریں / آر ٹی سی میں دوران برسر خدمت فوت ہونے والے ملازمین کے فرد خاندان کو ملازمت

آر ٹی سی میں دوران برسر خدمت فوت ہونے والے ملازمین کے فرد خاندان کو ملازمت

اہلیت ثابت کرنے کی مدت میں توسیع کر کے 10 سال کرنے کا منصوبہ ، ملازمت کے انکار پر 5 لاکھ روپئے معاوضہ
حیدرآباد۔12جولائی (سیاست نیوز) آر ٹی سی میں خدمات انجام دیتے ہوئے ہوئے فوت ہونے والے ملازمین کی جگہ فرد خاندان کو ملازمت کی فراہمی کی اسکیم میں اہلیت ثابت کرنے کی مدت میں توسیع کرتے ہوئے اسے 10سال کرنے کا منصوبہ ہے اور ملازمت پر خدمات انجام دیتے ہوئے فوت ہونے والے ملازمین کی جگہ ملازمت حاصل نہ کرنے کا ارادہ رکھنے والوںکو جو ایک لاکھ روپئے ادا کئے جاتے تھے اسے بڑھا کر 5لاکھ روپئے کرنے کی تجویز پیش کئے جانے کا امکان ہے۔ تلنگانہ ریاستی روڈ ٹرانسپورٹ کارپوریشن کی جانب سے کئے گئے ان فیصلوں کے متعلق بتایاجاتا ہے کہ آر ٹی سی کے ذرائع کے مطابق اس فیصلہ سے آر ٹی سی میں جاری اسکیم ’’بریڈ ونر‘‘ میں درخواست داخل کرتے ہوئے انتظار کرنے والوں کو فائدہ پہنچے گا۔ بتایاجاتا ہے کہ ریاست تلنگانہ میں 300سے زائد اس زمرہ کے درخواست گذار موجود ہیں جن کے مسائل حل کئے جانے ہیں لیکن اس کے باوجود ن کی درخواستیں زیر التواء رکھی گئی ہیں جس کے سبب انہیں مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ عہدیداروں کا کہنا ہے کہ اس اسکیم کے اصولوں میں ترمیم کا جو منصوبہ تیار کیا گیا ہے اس کا بنیادی مقصد یہ ہے کہ آر ٹی سی ملازمین جو خدمات کی انجام دہی کے دوران فوت ہوجاتے ہیں ان کی جگہ پر اہل فرد خاندان کو ملازمت کی فراہمی عمل میںلائی جاتی ہے لیکن اکثر یہ دیکھا جاتا ہے کہ متوفی ملازمین کے بچے کم عمر ہوتے ہیں یا پھر بیوہ کو بھی درکار معلومات حاصل نہیں رہتی اسی لئے انہیں حاصل ہونے والے اس فائدہ سے وہ محروم ہوتے ہیں یا پھر شارمک کے عہدہ پر متوفی کے بچے خدمات انجام دینا پسند نہیں کرتے اسی لئے وقت گذر جاتا ہے ۔اسی لئے مختلف یونین کے قائدین سے مشاورت کے بعد اس بات کا فیصلہ کیا گیا ہے کہ متوفی ملازمین کے رشتہ دار کو ان کی صلاحیت کے مطابق روزگار کی فراہمی اور انہیں صلاحیت کے حصول کیلئے وقت بھی فراہم کیا جائے ۔ یونین قائدین نے انتظامیہ سے خواہش کی ہے کہ وہ فوری طور پر زیر التواء درخواستوں کی یکسوئی کے سلسلہ میں اقدامات کریں تاکہ جو متوفی ملازمین ہیں ان کے افراد خاندان کو ملازمت حاصل ہو سکے۔ بتایاجاتا ہے کہ آر ٹی سی کے آغاز سے یہ اسکیم پر مؤثر عمل آوری کا سلسلہ جاری تھا لیکن 1999تا2009کے دوران اس اس اسکیم پر عمل آوری بند کر دی گئی تھی جس کے سبب اس مدت کے دوران متوفی ملازمین کے افراد خاندان کو ملازمتیں فراہم نہیں کی گئیں لیکن اس کے بعد حکومت نے مداخلت کرتے ہوئے آر ٹی سی انتظامیہ کو اس اسکیم کی بحالی کی ہدایت جاری کی تھی جس کے نتیجہ میں اسکیم اب تک برقرار ہے لیکن اب جو فیصلہ کیا گیا ہے اس سے آر ٹی سی ملازمین کو زبردست راحت حاصل ہوگی اور ان کے اہل خانہ کو اپنے حق سے محروم ہونے نہیں ؎دیا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT