Tuesday , December 11 2018

آزاد فلسطینی مملکت کیلئے ٹرمپ پر شاہ سلمان کا زور

ریاض ، 5 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) خادم حرمین شریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ پر زور دیا ہے کہ سعودی عرب آزاد فلسطینی مملکت کے قیام کی تائید و حمایت کرتا ہے جس کا دارالحکومت یروشلم ہے۔ ایک اخبار کی رپورٹ کے مطابق شاہ سلمان نے اس ہفتے کے اوائل صدر ٹرمپ کو ٹیلی فون کال میں اس بات کی ضرورت پر زور دیا کہ مشرق وسطیٰ امن مساعی کو آگے بڑھانا ہوگا، اور سعودی سلطنت کی فلسطینی۔ اسرائیلی جھگڑے کی یکسوئی اور فلسطینی عوام کے جائز حقوق کو یقینی بنانے کی خاطر ضروری مداخلت کی یقین دہانی کرائی۔ انھوں نے بتایا کہ سعودیہ کا موقف ٹھوس ہے۔ انھوں نے وائیٹ ہاؤس کے اس بیان پر اطمینان کا اظہار بھی کیا، جس میں امریکی حکومت نے یمن میں حوثی باغیوں کو ایران کی سرپرستی کی مذمت کی ہے۔ انھوں نے حوثی باغیوں کو سعودی سلطنت کے تئیں مسلسل عداوت کا ذکر کیا اور کہا کہ ریاض یمنی بحران کے سیاسی حل کا خواہش مند ہے اور وہاں کے لوگوں کو انسانی بنیادوں پر راحت فراہم کررہا ہے۔ دوسری طرف امریکی صدر ٹرمپ نے زور دیا کہ خطہ کیلئے ایران کے خطرے کا مقابلہ کرنے کی ضرورت ہے۔ انھوں نے کہا کہ وہ علاقے کو غیرمستحکم کرنے کوشاں ہے۔ صدر ٹرمپ نے خطہ میں استحکام برقرار رکھنے میں سعودی عرب کے رول کو سراہا۔ شاہ سلمان اور صدر ٹرمپ نے بین الاقوامی امور پر بھی تبادلہ خیال کیا اور عراق و شام میں آئی ایس آئی ایس دہشت گرد تنظیم سے لڑنے میں عالمی پیشرفت کا جائزہ لیا۔ شاہ سلمان نے شامی بحران کا بھی کوئی سیاسی حل تلاش کرنے کی اشد ضرورت پر زور دیا۔ علاوہ ازیں دونوں قائدین نے سعودی ولی عہد محمد بن سلمان جو نائب وزیراعظم اور وزیر دفاع بھی ہیں، امریکہ کو اُن کے سرکاری دورے پر تبادلہ خیال بھی کیا۔ شاہ سلمان نے پرنس محمد کے گرمجوشانہ استقبال پر ٹرمپ سے اظہار تشکر کیا، اور دونوں ملکوں کیلئے مفید کئی اہم باہمی معاملتوں پر دستخط کی ستائش بھی کی۔ٹرمپ نے بھی پرنس محمد کے کامیاب دورے کی تصدیق کی۔

TOPPOPULARRECENT