Tuesday , December 12 2017
Home / ہندوستان / آسام میں فورسیس کیساتھ جھڑپ، ایک ووٹر ہلاک

آسام میں فورسیس کیساتھ جھڑپ، ایک ووٹر ہلاک

احتجاجی رائے دہندوں پر قابو پانے سی آر پی ایف کی ہوائی فائرنگ
سوربھوگ ؍ چائے گاؤں ۔ 11 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) آسام کے ضلع بارپیٹا میں آج اسمبلی الیکشن کے دوران حلقہ سوربھوگ سنٹرل فورس اور ووٹروں کے درمیان جھڑپ ہوگئی جس میں ایک 80 سالہ ووٹر ہلاک اور 3 دیگر افراد بشمول دو سی آر پی ایف جوان زخمی ہوگئے۔ ضلع کامروپ میں بھی پولنگ کے دوران تشدد کا واقعہ پیش آیا جہاں برہم رائے دہندوں کے گروپ کو منتشر کرنے سی آر پی ایف کے جوانوں نے ہوائی فائرنگ کی۔ ضلع سوربھوگ کے انتخابات عہدیداروں نے کہا کہ سفرکامر پولنگ اسٹیشن پر اس وقت صورتحال بے قابو ہوگئی جب سی آر پی ایف والوں نے ووٹروں سے قطار میں کھڑے رہنے پر زور دیا جس پر بحث و تکرار اور دھکم پیل ہوگئی۔ جھگڑے میں80  سالہ ووٹر عبدالرشید، ایک اور رائے دہندوں مطلب علی کے ساتھ ساتھ سی آر پی ایف اسسٹنٹ کمانڈنٹ نول کشور اور کانسٹیبل امرجیت زخمی ہوئے۔ تمام چاروں کو بارپیٹا میڈیکل کالج ہاسپٹل منتقل کیا گیا جہاں عبدالرشید کو مردہ قرار دیا گیا۔ سی آر پی ایف کے دونوں آدمی دواخانہ میں شریک کئے گئے جبکہ مطلب علی کو ابتدائی علاج کے ڈسچارج کردیا گیا۔ اس دوران جلد ہی صورتحال پر قابو پالیا گیا اور پولنگ معمول کے مطابق آگے بڑھی۔ دریں اثناء کامروپ میں ایک حاملہ خاتون کے ساتھ سنٹرل فورس کے جوان نے مبینہ بدسلوکی کی جس پر رائے دہندے برہم ہوگئے۔ سپرنٹنڈنٹ آف پولیس پرسانتا سائیکیا نے کہاکہ یہ واقعہ تب پیش آیا جب ایک خاتون اپنا ووٹ ڈالنے کے بعد دوبارہ پولنگ اسٹیشن میں جانے کی کوشش کررہی تھی، کیونکہ وہ اپنے شیرخوار بچہ کو پولنگ سنٹر میں چھوڑ آئی تھی۔ تاہم سی آر پی ایف جوان نے اسے روکا جس پر دیگر ووٹروں نے اعتراض کیا اور معاملہ تشدد کی شکل اختیار کر گیا جس پر قابو پانے کیلئے سی آر پی ایف نے ہوائی فائرنگ کی۔

TOPPOPULARRECENT