Sunday , June 24 2018
Home / ہندوستان / آسام میں مسلم کش تشدد کیلئے مودی ذمہ دار: عمر عبداللہ

آسام میں مسلم کش تشدد کیلئے مودی ذمہ دار: عمر عبداللہ

سرینگر۔/3مئی، ( سیاست ڈاٹ کام ) جموں و کشمیر کے چیف منسٹر عمر عبداللہ نے آسام میں 32 مسلمانوں کی ہلاکت کا سبب بننے والے تشدد کو بھڑکانے کیلئے نریندر مودی کو ذمہ دار قرار دیا ہے۔ عمر عبداللہ نے حلقہ لوک سبھا بارہمولہ کے علاقہ تنگ مارگ میں ایک جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ’’ آسام میں 32 مسلمانوں کا قتل ہوا ہے۔ وہ کیوں؟

سرینگر۔/3مئی، ( سیاست ڈاٹ کام ) جموں و کشمیر کے چیف منسٹر عمر عبداللہ نے آسام میں 32 مسلمانوں کی ہلاکت کا سبب بننے والے تشدد کو بھڑکانے کیلئے نریندر مودی کو ذمہ دار قرار دیا ہے۔ عمر عبداللہ نے حلقہ لوک سبھا بارہمولہ کے علاقہ تنگ مارگ میں ایک جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ’’ آسام میں 32 مسلمانوں کا قتل ہوا ہے۔ وہ کیوں؟ کیونکہ بی جے پی میں وزارت عظمیٰ کے امیدوار نریندر مودی نے وہاں کے لوگوں کو مسلمانوں کے خلاف بھڑکانے کی کوشش کی تھی ۔

‘‘ مسٹر عبداللہ نے کہاکہ نریندر مودی نے چند دن قبل آسام میں انتخابی ریلیوں سے خطاب کے دوران کہا تھا کہ وہاں رہنے والے تمام مسلمان بنگلہ دیشی ہیں، جس کے نتیجہ میں ان پر حملے ہوئے ہیں۔ عمر عبداللہ نے کہا کہ ’’ تین دن قبل وہ ( مودی ) وہاں گئے تھے اور تما م مسلمانوں کو بنگلہ دیشی قرار دیا تھا اور آج 32مسلمانوں کو ’’ قبر میں‘‘ سلادیا گیا۔‘‘ کشمیری پنڈتوں کے انخلاء کیلئے نیشنل کانفرنس قائدین کو ذمہ دار قرار دینے سے متعلق مودی کے بیان کا حوالہ دیتے ہوئے عمر عبداللہ نے کہا کہ بی جے پی لیڈر نے ملک بھر میں تمام کشمیریوں کی توہین کی ہے۔

TOPPOPULARRECENT