Monday , September 24 2018
Home / ہندوستان / آسام میں 20000 افراد کو بیرونی قرار دیا گیا

آسام میں 20000 افراد کو بیرونی قرار دیا گیا

نئی دہلی ۔ 2 جنوری۔( سیاست ڈاٹ کام ) مرکزی وزیر کرن رجیجو نے آج کہاکہ بیرونی شہریوں سے متعلق ٹریبونل نے آسام میں اکتوبر 2017 ء تک تقریباً 20,000 افراد کو بیرونی شہری قرار دیا اور انھیں حراست کے مراکز میں رکھا گیا ہے۔ مملکتی وز یر برائے اُمور داخلہ نے لوک سبھا کو دیئے گئے تحریری جواب میں مزید کہاکہ ’’فارن ٹریبیونل کی جانب سے ان مقدمات کی یکسوئی سے متعلق ماہانہ رپورٹ کے مطابق آسام کے 19,612 ڈی ( مشتبہ ) ووٹرس کو اکتوبر 2017 ء تک بیروی شہری قرار دیا گیا ‘‘۔ رجیجو نے کہاکہ ڈی ووٹرس کی نوٹس جاری کرنا ایک قانونی عمل ہے اور عوام کو ہراساں کرنے کا کوئی سوال ہی پیدا نہیں ہوتا ۔ ڈی ووٹرس کو حراست میں نہیں رکھا جاتا ۔ انھوں نے کہا کہ 1997 ء کے دوران آسام میں فہرست رائے دہندگان کو جامع تنقیح و نظرثانی کے دوران حکومت آسام کے محکمہ داخلہ و سیاسی اُمور کی طرف سے بیرونی شہریوں کے بارے میں جاری کردہ وائیٹ پیپرس کے مطابق ان ہی ووٹرس کے ناموں پر ڈی ( مشتبہ ) کے نشان ثبت کئے گئے جو اپنی ہندوستانی شہریت کا صحیح موقف ثابت نہیں کرسکے تھے ۔ تنقیح رپورٹ کی بنیاد پر ہی الیکٹورل رجسٹریشن آفیسرس نے یہ فیصلہ کیاہے ۔ رجیجو نے کہاکہ ’’عدالتی فیصلوں ؍ ٹریبیونلس کے احکام کی بنیاد پر ان افراد کے ناموں پر درج کردہ لفظ ’’ڈی ‘‘ ( مشکوک و مشتبہ) ہٹا لیا جائے گا جب متعلقہ ووٹرس اپنی ہندوستانی شہریت ثابت کریں گے ۔ لیکن ہندوستانی شہریت ثابت نہ ہونے کی صورت میں فہرست رائے دہندگان سے اُن کے نام حذف کردیئے جائیں گے ‘‘۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT