آسٹریا میں قدرتی گیس کارخانہ میں دھماکہ

ایک ہلاک، 21 زخمی، ایک کی حالت تشویشناک
برلن ۔ 12 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) ایک بڑے قدرتی گیس کارخانے میں آسٹریا کی سرحد کے قریب دھماکے میں کم از کم ایک شخص ہلاک اور دیگر 21 زخمی ہوگئے۔ یہ دھماکہ دیگر ممالک کو گیس کی سربراہی کے درمیان خلل اندازی کا نتیجہ تھا۔ زخمیوں میں سے ایک شخص کی حالت نازک ہے، دیگر 20 معمولی سے زخمی ہوئے ہیں۔ اس کارخانے کے ایک آپریٹر نے ابتداء میں کہا تھا کہ ہلاک ہونے والے تمام افراد آسٹریائی شہری ہیں لیکن بعدازاں اس نے کہا کہ شدید زخمیوں میں دیگر 6 ممالک کے افراد بھی شامل ہیں جو کنٹراکٹ پر اس کارخانہ میں ملازم تھے۔ دھماکہ کے بعد کارخانے میں آگ لگ گئی۔ آپریٹر کے بموجب اسے دوپہر بعد مکمل طور پر بجھا دیا گیا۔ سرکاری زیرانتظام کارخانہ بند کردیا گیا ہے۔ پولیس نے اپنے ٹوئیٹر پر تحریر کیا کہ یہ دھماکہ ٹیکنیکی وجوہات کی بناء پر ہوا تھا تاہم تفصیلات کا انکشاف نہیں کیا گیا۔گیس کنکٹ نامی کمپنی نے بام گارٹن کارخانہ میں اس دھماکہ کو روس ناروے اور دیگر ممالک میں آنے والی پائپ لائن میں خرابی کا نتیجہ قرار دیا۔ اس پائپ لائن میں قدرتی گیس پر دباؤ ڈالا جاتا اور اسے ٹھنڈا کیا جاتا ہے۔ یہ مقام یوروپ کا سب سے اہم گیس سربراہی مرکز ہے ۔ ملازمین اور کمپنی کے ماہرین کارخانہ کی صورتحال کا تجزیہ کررہے ہیں۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT