Saturday , January 20 2018
Home / دنیا / آسٹریلیائی اسمگلرس کی سزائے موت پر عمل آوری کیلئے جزیرہ جاوا منتقلی

آسٹریلیائی اسمگلرس کی سزائے موت پر عمل آوری کیلئے جزیرہ جاوا منتقلی

سیلاکیپ (انڈونیشیا) ۔ 4 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) آسٹریلیا کے دو منشیات کے اسمگلرس جنہیں آج انڈونیشیا کے ایک جزیرہ پر منتقل کیا گیا ہے جہاں انہیں سزائے موت دی جائے گی جیسا کہ آسٹریلیائی قائد نے بتایا کہ ان کے ملک میں دونوں آسٹریلیائی شہریوں کو سزائے موت نہ دیئے جانے انڈونیشیا کے ساتھ سفارتی کوششوں کے باوجود مایوسی کا سامنا کرنے پر عوام غم

سیلاکیپ (انڈونیشیا) ۔ 4 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) آسٹریلیا کے دو منشیات کے اسمگلرس جنہیں آج انڈونیشیا کے ایک جزیرہ پر منتقل کیا گیا ہے جہاں انہیں سزائے موت دی جائے گی جیسا کہ آسٹریلیائی قائد نے بتایا کہ ان کے ملک میں دونوں آسٹریلیائی شہریوں کو سزائے موت نہ دیئے جانے انڈونیشیا کے ساتھ سفارتی کوششوں کے باوجود مایوسی کا سامنا کرنے پر عوام غم و غصہ کے عالم میں ہیں۔ ’’بالی نائن‘‘ نامی منشیات اسمگلنگ کرنے والی کے رِنگ لیڈرس اینڈریو چان، میورن سکمارن کو آج صبح جلد ہی نیند سے بیدار کردیا گیا اور بالی کی کیروبوئن سے منتقل ہونے کے لئے تیاری کے لئے کچھ منٹس دیئے گئے۔ مقامی وزارت انصاف کے عہدیدار نعمان پترا نے یہ بات بتائی۔ ان ملزمین کو 2006ء میں انڈونیشیا سے ہیروئن اسمگل کرنے کی کوشش کے دوران گرفتار کرلیا گیا تھا اور سزائے موت سنائی گئی تھی۔ یہ ملزمین نے جیل چھوڑنے سے قبل سب کو شکریہ کہا۔ بعدازاں انہیں جس وقت ہتھکڑیاں پہنائی گئیں، وہ بالکل خاموش تھے۔

مائیکل چان نے منتقلی سے قبل اپنے بھائی سے ملاقات کی خواہش ظاہر کی تھی لیکن حکام نے اس کی وہ خواہش پوری نہیں کی جبکہ نعمان نے بتایا کہ اجازت اس لئے نہیں دی گئی کیونکہ آج وزیٹنگ کا دن مقرر نہیں تھا۔ ملزمین کو چارٹرڈ طیارہ کے ذریعہ سیلاکیپ، جزیرہ جاوا منتقل کیا۔ دونوں ملزمین کی سزائے موت کے خلاف رحم کی درخواست کو صدر نے مسترد کردیا تھا جو سزائے موت سے بچنے کے لئے آخری حربہ کے طور پر استعمال کیا جاتا ہے۔ انڈونیشیا میں سزائے موت پر عمل آوری ملزمین کو فائرنگ اسکواڈ کے حوالے کرکے مکمل کی جاتی ہے جہاں یکبارگی اندھادھند فائرنگ کے ذریعہ چند سیکنڈس میں ملزم کا کام تمام ہوجاتا ہے۔

TOPPOPULARRECENT